کشمیر کو ایک قتل گاہ میں تبدیل کردیا گیا ہے، یاسین ملک

سری نگر: جموں و کشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین محمد یاسین ملک نے کہا ہے کہ کشمیر کو ایک قتلگاہ میں تبدیل کردیا گیا ہے، جہاں بھارت کی افواج اور پولیس انسانوں کا بے دریغ قتل کرنے میں منہمک ہیں اور انسانی برادری اس پر خاموش تماشائی بن کر مشاہدے میں مصروف ہے۔ ایک عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ٹھیک اسی طرح فلسطینیوں کو بھی اسرائیلی صیہونیت بے دردی کے ساتھ گاجر مولی کی طرح کاٹ رہے ہیں اور عالمی برادری خاص طور پر امریکہ قاتلوں کے ہاتھ روکنے کے بجائے اسرائیلی دہشت گردی کے دفاع میں اقوام متحدہ کی قراردادوں کو ویٹو کرتے نظر آتے ہیں۔

لبریشن فرنٹ کے چیئرمین نے کہا کہ کشمیر کو ایک قتلگاہ میں تبدیل کردیا گیا ہے جہاں روزانہ کی بنیاد پر جوانوں کو قتل کیا جارہا ہے لیکن دنیا کے کسی انسان کے کان پر کوئی جوں تک نہیں رینگ رہی ہے نا ہی کوئی دل یا زبان کشمیریوں کے دکھ و درد کو محسوس کرتا نظر آرہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ بھارت نے اپنے فوجی طاقت اور پولیس جبر کو استعمال کرتے ہوئے ان جوانوں جو کہ پرامن تحریک اور مزاحمت کا حصہ تھے پر مظالم ڈھائے، ان کا ٹارچر کیا، انہیں اور ان کے گھر والوں کی تذلیل و تحقیر کی اور یوں انہیں پشت بہ دیوار لگاکر مسلح جدوجہد کی جانب دھکیل دیا اور اب انہی معصومین کے لہو کی ہولی کھیل کر بھارتی فوجی اور پولیس اور ان کے سیاسی آقا قتل و غارت کا جشن منانے میں مصروف ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

تنازعہ کشمیر کی بدولت پورا جنوبی ایشیا ایک ہیجانی کیفیت کا شکار ہے، مسعود خان

صدر آزاد کشمیر سردار مسعود خان نے کہا ہے کہ ڈاکٹر عاصمہ شاکر کی کتاب …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے