معصوم بچی کیساتھ جنسی زیادتی، نواز لیگ کا رہنما 20 سال کیلئے اندر، پورا واقعہ جان کر آپ ۔۔۔

سیشن عدالت نے مسلم لیگ ن کے مقامی رہنماءکو معصوم بچی سے بدفعلی کا الزام ثابت ہونے پر 20سال قید اور ایک لاکھ روپے جرمانہ کی سزا سنادی ۔ڈیلی ٹائمز کے مطابق ایڈیشنل سیشن جج احمد ارشد محمود نے ملزم محمد اشفاق اور اس کی ساتھی خاتون ڈاکٹر کیخلاف مقدمے کا فیصلہ سنادیا جس نے بدفعلی کا شکار بچے کے حاملہ ہونے پر اسقاط حمل کیاتھاتاہم ملزم کے دو بھائیوں کو عدم شواہد کی بنیاد پر بری کردیاگیا۔اس سے قبل 2015ءمیں متاثرہ لڑکی کی والدہ نے مقامی رہنماءاور اس کے ساتھیوں کیخلاف کیس دائر کیاتھااور موقف اپنایا کہ لڑکی کے والد کے کزن ملزم نے اپنے دو بھائیوں سمیت گن پوائنٹ پر معصوم بچی کو زیادتی کا نشانہ بنایا، پھر معصوم بچی کے حاملہ ہونے کی خبر پر نجی کلینک میں حمل ضائع کروادیا۔یہ بھی انکشاف ہوا تھا کہ خاتون ڈاکٹر نے اسقاط حمل کے لیے ملزم سے 80ہزار روپے وصول کیے ۔

یہ بھی پڑھیں

کٹھ پتلیوں کو سیاست سے فارغ کرنا ہے

کٹھ پتلیوں کو سیاست سے فارغ کرنا ہے

رحیم یار خان:  ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے