این آئی سی ایل اسکینڈل؛ ملزم محسن وڑائچ کوایک ہفتے میں گرفتارکرنے کا حکم

لاہور: سپریم کورٹ نے این آئی سی ایل اسکینڈل کے ملزم محسن وڑائچ کو ایک ہفتے میں گرفتار کرنے کا حکم دیتے ہوئے لاہور اور کراچی میں دائر ریفرنسز کی ہفتہ واررپورٹ بھی طلب کر لی ہے۔

سپریم کورٹ لاہوررجسٹری میں چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں فاضل بنچ نے این آئی سی ایل اسکینڈل میں ملوث ملزم کی عدم گرفتاری پرسخت برہمی کا اظہار کیا۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ مجھے آپ سے زیادہ پتہ ہے کہ ملزم کوکیوں گرفتارنہیں کیا جا رہا، جیسے راؤ انوار کو گرفتار کرایا محسن وڑائچ کے لیے بھی وہی طریقہ اپنانا پڑے گا۔

چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ نیب میں مقدمے کی ایک دن کی بھی تاخیربرداشت نہیں کی جائے گی، لاہوراورکراچی میں دائرریفرنس کے حوالے سے ہفتہ واررپورٹ عدالت میں پیش کی جائے۔ ڈی جی ایف آئی اے نےعدالت کو بتایا کہ ملزم کوگرفتارکرنے کے لیے تمام تکنیکی ذرائع استعمال کررہے ہیں۔ چیف جسٹس پاکستان نے ملزم کو گرفتارکرنے کا حکم دیتے ہوئے کیس کی سماعت ایک ہفتے کے لیے ملتوی کردی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

برقی موٹرسائیکلوں کی تیاری کا عمل شروع

برقی موٹرسائیکلوں کی تیاری کا عمل شروع

لاہور: میں گذشتہ ایک دہائی کے دوران اس مسئلے کا حل نکالنے کے لیے مختلف …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے