2017 میں ملک میں انسانی حقوق کی صورتحال مایوس کن رہی، ہیومن رائٹس کمیشن پاکستان

ہیومن رائٹس کمیشن پاکستان نے سالانہ جائزہ رپورٹ میں انکشاف کیا ہے کہ 2017 میں ملک میں انسانی حقوق کی صورتحال مایوس کن رہی۔ہیومن رائٹس کمیشن آف پاکستان نے سال 2017 کی جائزہ رپورٹ پیش کر دی۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سال 2017 میں ملک میں انسانی حقوق کی صورتحال مایوس کن رہی، بلوچستان اور سندھ میں جبری گمشدگی کے 2000 واقعات پیش آئے، جبکہ بلوچستان میں جبری گمشدگیوں اور ماورائے عدالت قتل کے بڑھتے ہوئے واقعات انتہائی تشویشناک ہیں۔ایچ آر سی پی کے مطابق گزشتہ سال بلوچستان میں 545 افراد کو ماورائے عدالت قتل کیا گیا، مختلف علاقوں سے 90 تشدد زدہ لاشیں برآمد ہوئیں، جب کہ فرقہ واریت کے باعث 319 انسانی جانیں ضائع ہوئی، اس کے علاوہ بلوچستان میں خواتین کے خلاف جرائم کے 350 کیسز رجسٹر ہوئے۔

یہ بھی پڑھیں

چمن میں کلی ٹاکی میں خسرے سے متاثرہ 5 بچے دوران علاج جاں بحق ہو گئے

چمن میں کلی ٹاکی میں خسرے سے متاثرہ 5 بچے دوران علاج جاں بحق ہو گئے

چمن: صوبہ بلوچستان کے ضلع قلعہ عبداللہ کے علاقے چمن میں ایک ہی گاؤں کے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے