سات سالہ بیٹی کا خواہش کی تکمیل کیلئے بیدردی سے قتل کیا، شقی القلب والد کا اعتراف جرم، تفصیل جان کر آپ غصے۔۔

سات سالہ بچی نصرت کے قتل کا ڈراپ سین، باپ ہی قاتل نکلا۔تفصیلات کے مطابق نواحی علاقہ پنج کوسی کے رہائشی محمد اشرف جو کہ شادی شدہ اور تین بچوں کا باپ ہے۔ اپنے پڑوسی مقصود وٹوکی بھانجی اقراءسے دوسری شادی کرنا چاہتا تھا۔ انکار کرنے پر محمد اشرف نے مقصود وٹو سے بدلہ لینے کامنصوبہ بنایا جس پر اس نے اپنی سات سالہ بیٹی نصرت کو ٹوکے کی مدد سے وار کرکے قتل کردیا اور اس کی لاش مقصود وٹو کے گھر کے سامنے پھینک دی اور تھانے میں اپنے پڑوسی مقصود وٹو پر نصرت کو قتل کرنے کا الزام لگادیا اور موقف اختیار کیا کہ اس کا پڑوسی کے ساتھ دیوار کے تنازعہ پر جھگڑا چل رہا تھا۔ جس کی بناءپر اس نے اس کی بیٹی کو قتل کردیا۔دوران تفتیش یہ بات ثابت ہوئی کہ رشتہ نہ دینے کی رنجش پر ملزم محمد اشرف نے اپنی بیٹی کو خود ہی قتل کیا۔ دوران تفتیش ملزم محمد اشرف نے تسلیم کیا کہ اس نے اپنی بیٹی کو اپنی خواہش کی تکمیل کیلئے قتل کیا۔ پولیس نے آلہ قتل ٹوکہ برآمد کرکے ملزم کو گرفتارکرلیا۔

یہ بھی پڑھیں

وکلا کی جرات کیسے ہوئی اسپتال پر حملہ کرنے کی، لاہور ہائیکورٹ

وکلا کی جرات کیسے ہوئی اسپتال پر حملہ کرنے کی، لاہور ہائیکورٹ

لاہور ہائیکورٹ نے ریمارکس دیے ہیں کہ وکلا کی جرات کیسے ہوئی اسپتال پر حملہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے