نگران وزیر اعظم کے نام پر حکومت اور اپوزیشن میں ڈیڈ لاک برقرار ، انتخابات کے التواءکاخدشہ

نگران وزیراعظم کے نام پر حکومت اور اپوزیشن میں ڈیڈ لاک پیداہوگیاہے جس کی وجہ سے انتخابات کے انعقاد میں دیر ہو سکتی ہے اور انتخابات کا انعقاد التواءمیں بھی پڑ سکتی ہے ۔ نجی ٹی وی چینل کے مطابق مسلم لیگ ن کی جانب سے کہا جا رہا ہے کہ پیپلز پارٹی نگران وزیراعظم کا نام دے لیکن ابھی تک پیپلز پارٹی کی طرف سے بھی کوئی نام نہیں دیا گیا جبکہ ن لیگ بھی اس معاملے پر خاموش ہے، جس سے صاف پتا لگتا ہے کہ معاملات کس سمت جارہے ہیں ؟ ایسی صورتحال مقررہ وقت کے اندر انتخابات کے انعقاد کو مشکل میں ڈال سکتی ہے ۔

یہ بھی پڑھیں

آصف زرداری کو ان کے ذاتی معالج سے علاج کروانے کی اجازت دی جائے

آصف زرداری کو ان کے ذاتی معالج سے علاج کروانے کی اجازت دی جائے

اسلام آباد: سینیٹر رحمٰن ملک کا کہنا تھا کہ کمیٹی نے سابق صدر کی صحت …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے