جوابدہ کون۔ ریاست یا حکمران، ادارے یا افسران۔۔؟ غربت سے تنگ باپ کی چار بچوں سمیت اجتماعی خودکشی،

نانوالہ میں سرفراز نامی شخص نے گھریلو حالات سے تنگ آکر 3 بچوں کو قتل کرکے خود کشی کرلی۔ شیخوپورہ کے علاقے مانانوالہ کے کوٹ کاہلواں گاؤں کے رہائشی سرفراز نے گھریلوحالات سے تنگ آکر ناصرف خود کوموت کو گلے لگا لیا بلکہ اپنے 3 معصوم بچوں کو بھی موت کے منہ میں دھکیل دیا۔ پولیس حکام کے مطابق سرفراز کے اہل محلہ نے بیان دیا ہے کہ سرفراز اور اس کی بیوی کے درمیان کافی عرصے سے ناچاقی چل رہی تھی جب کہ گھر کے حالات بھی ٹھیک نہیں تھے جس پر اس کی بیوی کچھ عرصہ قبل روٹھ کر میکے چلی گئی تھی۔اہل علاقہ کے بیان کے مطابق گھریلو حالات سے تنگ سرفراز نے دلبرداشتہ ہوکر اپنے بیٹے 11 سالہ محمد حسنین، 8 سالہ بیٹی زینب اور 4 سالہ لائبہ کو تیز دھار آلے سے قتل کرکے خودکشی کرلی۔ پولیس نے چاروں لاشیں قبضے میں لے کر پوسٹ مارٹم کے لئے بھیج دی ہیں جب کہ مقتول بچوں کی ماں کو بھی شامل تفتیش کرلیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

ہم مولانا فضل الرحمان کی گزشتہ پارلیمان کی تقریروں کی روشنی میں آگے بڑھ رہے ہیں

ہم مولانا فضل الرحمان کی گزشتہ پارلیمان کی تقریروں کی روشنی میں آگے بڑھ رہے ہیں

سیالکوٹ: پارلیمان اس وقت تک جعلی نہیں ہو سکتی جب تک مولانا فضل الرحمان کے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے