اگر میں غدار اور ملک دشمن ہوں تو ایک قومی کمیشن بنایا جائے، نواز شریف

بنیر: پاکستان مسلم لیگ (ن) کے تاحیات قائد اور سابق وزیر اعظم نواز شریف نے کہا کہ 2018ء مسلم لیگ کی کامیابی کا سال ہوگا۔ بونیر میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ دنیا بدل گئی، لیکن عمران خان کا خیبر پختونخوا وہی پرانہ ہے، اگر نواز شریف کی یہاں حکومت ہوتی تو موٹروے یہاں پر موجود ہوتی۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں کی آنکھ میں آنکھ ڈال کر دہشت گردی ختم کی، سلام ہے بونیر کے لوگوں پر جنہوں نے اتنی تکلیفیں اٹھائی لیکن یہاں امن قائم ہوا اور آج بونیر کے لوگ سکون کا سانس لیتے ہیں۔ سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ عمران خان نے جو ووٹ لے کر دھوکا دیا وہ بتائیں کہ انہوں نے بونیر کیلئے کیا کام کیا، عمران خان نے اس علاقے میں کچھ نہیں کیا بلکہ پورے خیبر پختونخوا کا یہی حال ہے۔

انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخوا میں ہر جگہ کا ایک ہی حال ہے، لیکن ہم آئیں گے تو یہاں بھی کام کریں گے اور اِسے بھی لاہور جیسا بنائیں گے کیونکہ نواز شریف جو وعدہ کرتا ہے وہ پورا کرتا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف نے دہشت گردی، لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کا جو وعدہ کیا وہ پورا کیا، اگر آئندہ عام انتخابات میں ہماری حکومت آتی ہے تو خیبر پختونخوا کی قسمت بدل جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ قسمت دیکھو کہ جو نواز شریف پاکستان سے دہشت گردی کا خاتمہ کرتا ہے، اسے ایٹمی قوت بناتا ہے، جو کارگل کی رسوائی پر پردہ ڈالتا ہے، جو پاکستان میں موٹروے بناتا ہے اور جو لوڈ شیڈنگ کا خاتمہ کرتا ہے، آج اس نواز شریف پر غداری کا الزام لگایا جا رہا۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کے ایٹمی دھماکے کرنا کیا غداری ہے؟ پاکستان میں جو دہشت گردی کا بیچ بوتے ہیں وہ محبت وطن ہیں، جو پاکستان کا آئین اور قانون توڑتے ہیں وہ محب وطن ہیں، اس ملک میں الٹی گنگا بہہ رہی ہے، لیکن ہمیں اسے نہیں بہنے دینا، عوام نواز شریف کے ساتھ مل کر ان تمام مسائل کو ختم کریں گے اور پاکستان کے اندر ایک خوشحال معاشرہ قائم کریں گے۔ سابق وزیر اعظم نے کہا کہ پاکستان دنیا میں تنہا ہو رہا لیکن میری اس بات پر مجھے غدار کہا جا رہا، اگر پاکستان کیلئے اچھی بات کرتا ہوں تو مجھے اس ملک سے خلوص ہے، یہ ملک سب کا ہے یہاں کسی کی اجارہ داری نہیں ہے، اس ملک کو کوئی تکلیف پہنچے ہم اسے برداشت کرنے کو تیار نہیں ہے۔

نواز شریف نے کہا کہ اگر میری یہ باتیں ناگوار گزرتی ہیں اور میں غدار اور ملک دشمن ہوں تو ایک قومی کمیشن بنایا جائے اور اس کا حساب کتاب ہو جائے، جو لوگ مجھے غدار کہتے ہیں وہ بھی اس کمیشن کے سامنے آئیں اور پھر جو مجرم ہو اسے سرعام پھانسی پر لٹکا دیا جائے۔ سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ میں وعدہ کرتا ہوں کہ عوام کے ووٹ کی حرمت کو کسی صورت قربان نہیں ہونے دوں گا۔ انہوں نے کہا کہ غدار اس کو کہا جا رہا جو پاکستان کیلئے جیتا اور مرتا ہے، نواز شریف ایک محبت وطن آدمی ہے اور اسے غدار کہنے والا سب سے بڑا غدار ہوگا۔

مسلم لیگ کے قائد کا کہنا تھا کہ 5 ارب ڈالر کا الزام لگانے والے چیئرمین نیب کو اس طرح نہیں جانیں دیں گے، یہ قوم چیئرمین نیب کے احتساب کا مطالبہ کرتی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں ہمیشہ وزیراعظم کے ساتھ یہی سلوک کیا جاتا، لیکن اب یہ قوم ووٹ کی حرمت کا خیال کرے گی، اب کسی کی مجال نہیں ہوسکتی کہ وہ ووٹ کی عزت کو روندے۔ عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ چیئرمین تحریک انصاف نے اس صوبے کیلئے کیا کیا؟ یہاں کے نوجوانوں کو نہ نوکری دی نہ ہی یہاں بجلی پیدا کی۔

نواز شریف نے کہا کہ مجھے وزارت عظمٰی اور مسلم لیگ (ن) کی صدارت سے نااہل کردیا گیا، اگر عوام چاہتے ہیں کہ یہ نااہلی ختم ہو تو بونیر کے عوام نے (ن) لیگ کو اتنے ووٹ دینے ہیں جتنے تاریخ میں کسی کو نہیں دیئے گئے ہوں۔ انہوں نے بونیر کے عوام سے وعدہ کیا کہ ہم ایسا پروگرام بنا رہے ہیں کہ غریبوں کو گھر، نوجوانوں کو روزگار فراہم کریں گے، لیکن عوام نے وعدہ کرنا ہے کہ وہ ووٹ کو عزت دیں گے۔

یہ بھی پڑھیں

پہلی بار, وانا میں, پولیس اسٹیشن قائم , کردیا, گیا

پہلی بار وانا میں پولیس اسٹیشن قائم کردیا گیا

وانا: قبائلی اضلاع کے خیبر پختونخوا میں انضمام کے بعد جنوبی وزیرستان وانا میں پولیس …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے