امام خمینی کے مزار اور ایرانی پارلیمنٹ پہ حملے کے ذمہ دار آٹھ افراد کو سزائے موت

ایران میں گزشتہ سال پارلیمنٹ اور امام خمینی کے مزار پر حملوں کے جرم میں 8 افراد کو سزائے موت سنادی گئی۔بین الاقوامی میڈیا رپورٹس کے مطابق تہران کی عدالت نے گزشتہ سال ایک ہی روز پیش آئے دہشتگردی کے واقعات میں ملوث ہونے کے جرم میں 8 افراد کو موت کی سزا سنائی ہے۔ جون 2017میں پارلیمنٹ اور امام خمینی کے مزار پر حملوں میں 18 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے تھے۔ان حملوں کی ذمہ داری شدت پسند تنظیم داعش نے قبول کی تھی جس کے بعد حملوں میں ملوث ہونے کے الزام میں درجنوں افراد کو گرفتار کیا گیا تھا جن میں سے بعض کا تعلق داعش سے بتایا گیا۔عدالت نے 8 ملزمان کو سزائے موت سنادی جب کہ 18 دیگر کا ٹرائل جاری ہے ، سزائے موت کے ملزمان کو سزا کے خلاف اپیل دائر کرنے کے لیے 20 دن کی مہلت دی گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

عراق، ملین مارچ میں فلسطینی قوم کی حمایت،

عراق، ملین مارچ میں فلسطینی قوم کی حمایت

عراقی عوام نے جمعے کے روز اپنے ملین مارچ کے دوران جہاں ملک سے امریکی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے