کرایہ دو یا پھر اپنی بیٹی “ اہل خانہ بیٹی دینے پہ مجبور، پولیس نے چھاپہ مارا تو اندر کا منظر۔۔۔

بھارتی شہر حیدرآباد میں نے پولیس نے چھاپا مار کر 15 سالہ لڑکی کو زبردستی 38 سالہ شخص سے شادی کرنے سے بچا لیا ہے ۔بھارتی میڈیا کے مطابق 15 سالہ لڑکی نے حال ہی میں 10 ویں کے امتحانات پاس کیے ہیں اور وہ بہت ہی لائق طالبہ ہے جس کی شادی کے اس کے گھر والے زبردستی مالک مکان کے ساتھ کروا رہے تھے جو کہ جسمانی طور پر بالکل ٹھیک بھی نہیں ہے تاہم پولیس نے بر وقت کارروائی کرتے ہوئے لڑکی کو مندر سے بازیاب کروا لیاہے ۔رمیش گپتا جو کہ لڑکی سے شادی کرنے جا رہا تھا وہ ٹھیک سے چل بھی نہیں پاتا بلکہ وہ بہت ہی مشکل سے سہارے کے ساتھ کھڑا ہوتاہے اور وہ اپنے علاقے میں ایک گاڑیوں کی مرمت کرنے والی ورکشاپ میں کام دیکھتاہے جو کہ اس کے اہل خانہ نے اسے بنا کر دی ہے ۔پولیس کا کہناتھا کہ جب کرائے دار کرایہ دینے میں ناکام ہو جاتے تو یہ ان کو پیشکش کرتے تھے کہ وہ اپنی بیٹی کی شادی ہمارے بیٹے کے ساتھ کر دیں کیونکہ اس کی دیکھ بھال کرنے کیلئے لڑکی کی ضرورت ہے ۔

یہ بھی پڑھیں

امریکی سینیٹر کی ایران مخالف پالیسیوں پر نکتہ چینی

امریکی سینیٹر کی ایران مخالف پالیسیوں پر نکتہ چینی

۔ امریکی سینیٹر برنی سینڈرز نے ایران کے خلاف حکومت امریکہ کی جانب سے عائد …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے