احسن اقبال پر حملہ کرنے والے ملزم نے گولیاں چلانے کی وجہ بتا دی، تعلق خادم رضوی گروپ سے نکل آیا

نارووال: وزیر داخلہ احسن اقبال پر حملہ کرنے والے ملزم نے کہا ہے کہ اس نے ختم نبوت کے معاملے پر احسن اقبال پر حملہ کیا۔ پاکستان ویوز کے مطابق حملہ آور عابد حسین کی عمر 21 سال اور اس کا تعلق اسی گاؤں کنجروڑ سے ہے جہاں وزیر داخلہ کارنر میٹنگ میں شریک تھے۔ ملزم کے والد کا نام منظور گجر ہے، ملزم کا تعلق ایک مذہبی تنظیم سے بتایا جارہا ہے۔

ملزم نے پولیس کو دیے گئے ابتدائی بیان حملے کا اعتراف کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس نے ختم نبوت کے معاملے پر وزیر داخلہ پر حملہ کیا حملہ کرنے کے فیصلے میں میرے ساتھ کوئی شریک نہیں یہ میرا ذاتی فیصلہ ہے۔ ملزم کے بیان کی مزید تفصیلات پولیس نے ابھی ظاہر نہیں کیں۔

اس ضمن میں وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ ہمیں معلوم ہوا ہے کہ ملزم کا تعلق تحریک لبیک سے ہے، انتہا پسندی کی سوچ کی ہمارا مذہب بھی اجازت نہیں دیتا۔ واضح رہے کہ ملزم عابد حسین نے آج نارووال میں وزیر داخلہ احسن اقبال پر دو گولیاں چلائیں جس کے باعث احسن اقبال زخمی ہوگئے ملزم کو موقع سے گرفتار کرلیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں

مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ حکمران کشمیر کو بیچ چکے ہیں

مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ حکمران کشمیر کو بیچ چکے ہیں

لاہور: سربراہ جمعیت علمائے اسلام (ف) مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ حکومت روزانہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے