قاتل آزاد، مقتول مقید، ہزارہ ٹاؤن کے گرد خندقیں کھود دی گئیں

کوئٹہ میں شیعہ ہزارہ قوم کے تحفظ کیلئے نئے اقدامات شروع کر دیئے گئے۔ زنگی نالے سے ہزارہ ٹاؤن میں غیر متعلقہ افراد کی آمد ورفت روکنے کیلئے تقریباً تین کلو میٹر خندق کھود دی گئی۔ سیکٹڑ کمانڈر کوئٹہ ایف سی بریگیڈیئر تصور ستار کے مطابق کوئٹہ میں دہشتگردی کے خطرات کے پیش نظر شیعہ ہزارہ آبادی والے علاقوں کی سکیورٹی کیلئے مزید اقدامات شروع کر دیئے۔ زنگی نالے سے ملحقہ ہزارہ ٹاؤن کے عقبی راستوں پر دو ہزار آٹھ سو میٹر طویل خندق کھود دی گئی ہے۔ چھ فٹ گہری اور تقریباً آٹھ فٹ چوڑی خندق سے کرانی، عیسٰی نگری اور زنگی نالے سے ہزارہ ٹاؤن میں داخلے کے ممنوعہ راستے بند کر دیئے گئے۔ خندق کے علاوہ تقریباً چھ سو میٹر طویل حفاظتی بند بھی بنایا گیا ہے۔ ایف سی حکام کا کہنا ہے کہ غیر ضروری راستوں کی بندش سے شیعہ ہزارہ آبادی علاقوں کی سکیورٹی میں بہتری آئے گی۔ ڈی آئی جی کوئٹہ عبدالرزاق چیمہ کا اس حوالے سے کہنا تھا کہ پولیس اور ایف سی نے شیعہ ہزارہ قوم اور مقامی لوگوں کے ساتھ مشاورت کے بعد یہ اقدام اٹھایا ہے، چونکہ ہزارہ ٹاؤن جانے والے تمام راستوں پر سکیورٹی دینا مشکل ہے۔ اس لئے غیر ضروری راستے بند کر دیئے گئے ہیں۔ اس طرح پولیس اور ایف سی کو اس حساس علاقے کو سکیورٹی فراہم کرنا، آسان رہے گا۔ یاد رہے کہ ہزارہ ٹاؤن میں ماضی میں بھی دہشتگردی کے کئی بڑے واقعات ہوچکے ہیں، جس کے بعد ہزارہ ٹاؤن کے داخلی راستوں پر ایف سی نے چیک پوسٹیں قائم کر دی تھیں۔

یہ بھی پڑھیں

خضدار میں قبائلی رہنما نواب امان اللہ کے قافلے پر حملہ

خضدار میں قبائلی رہنما نواب امان اللہ کے قافلے پر حملہ

کوئٹہ: مسلح افراد نے قافلے پر فائرنگ کی جس سے امان اللہ اور ان کے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے