نیب ریفرنسز؛ نوازشریف اور مریم کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست پر فیصلہ محفوظ

اسلام آباد: احتساب عدالت نے نواز شریف اور مریم نواز کی ایک ہفتے کے لیے عدالت میں پیشی سے استثنیٰ کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا ہے۔ اسلام آباد کی احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کے خلاف نیب ریفرنسز کی سماعت کی، نواز شریف اور مریم نواز نے ایک ہفتے کے لئے عدالت پیشی سے استثنیٰ کی درخواست دائر کی۔

درخواست میں کلثوم نواز کا میڈیکل سرٹیفیکیٹ بھی منسلک کیا گیا، نیب پراسیکیوٹر کی جانب سے درخواست کی مخالفت کرتے ہوئے کہا گیا کہ نیب نے نواز شریف کا نام ای سی ایل میں شامل کرنے کی سفارش کررکھی ہے، میڈیکل رپورٹ میں کہیں نہیں لکھا کہ پورے خاندان کو لندن میں موجود ہونا چاہیے، کلثوم نواز کے دونوں بیٹے حسین اور حسن نواز پہلے ہی لندن میں موجود ہیں۔ اس لئے نواز شریف کو بیرون ملک جانے کی اجازت نہ دی جائے۔ عدالت نے درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔

سماعت کے دوران پاناما جے آئی ٹی کے سربراہ واجد ضیا نے ایون فیلڈ پراپرٹیز ریفرنس میں بیان ریکارڈ کراتے ہوئے بتایا کہ طارق شفیع نے دوران تفتیش قطری شہزادے کے ساتھ معاہدے اور بارہ ملین درہم نقد دینے کا ذکر کیا، انہوں نے بتایا کہ یہ رقم لندن فلیٹس کی سیٹلمنٹ کے لئے استعمال ہوئی، متحدہ عرب امارات نے بتایا کہ آہلی اسٹیل ملز کے میٹریل کی دبئی سے سعودی عرب منتقلی کا ریکارڈ نہیں، بی سی سی آئی کا واجب الادا قرضہ ادا نہ کرنے پر طارق شفیع کو سزا ہوئی۔

یہ بھی پڑھیں

جیل میں صرف جیل مینوئل کے مطابق سہولیات فراہم کی جارہی ہیں

جیل میں صرف جیل مینوئل کے مطابق سہولیات فراہم کی جارہی ہیں

راولپنڈی: مہناز سعید کا مزید کہنا تھا کہ جیل میں انہیں غیر قانونی سہولیات فراہم …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے