چیف جسٹس فوج کوملک میں شفاف انتخابات کرانے کا حکم دیں، شیخ رشید

راولپنڈی: عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد نے اپنے وضاحتی بیان میں کہا ہے کہ گزشتہ روز انہوں نے جوڈیشل مارشل کا مطالبہ کیا تھا اس کا مطلب یہ ہے کہ چیف جسٹس آف پاکستان غیرجانبدار وفاقی اور صوبائی حکومتوں کا انتخاب کریں اور فوج کو آرٹیکل 199 کے تحت حکم کریں کہ ملک میں صاف اور شفاف الیکشن کرائے۔

اپنے ویڈیو بیان میں شیخ رشید نے کہا کہ انہوں نے گزشتہ روز جوڈیشل مارشل لاء کی بات کی جس کا مطلب یہ ہے کہ چیف جسٹس غیرجانبدار وفاقی اور صوبائی حکومتوں کا انتخاب کریں، فوج کو آرٹیکل 199 کے تحت حکم کریں کہ ملک میں صاف اورشفاف الیکشن کرائے جائیں۔

نوازشریف کے داماد کیپٹن ریٹائرڈ صفدر پر تنقید کرتے ہوئے شیخ رشید نے کہا کہ کیپٹن صفدر نے9 ارب روپیہ نکلوایا، جس پر انہوں نے چیف جسٹس کے حکم پر نیب میں درخواست دی ہے، اس کے علاوہ ایل این جی پراجیکٹ میں دو سو ارب روپے کی کرپشن پر بھی نیب میں درخواست دی ہے۔

شیخ رشید نے کہا کہ وہ نا تو منی لانڈر ہیں اور نا ان کے بیرون ملک اثاثے ہیں، شیخ رشید نے کہا کہ ان کی تو کوئی اولاد بھی نہیں، ایک کا ہندسہ جمع نہیں کیا تو اس کا یہ مطلب ہرگز نہیں کہ میری دستاویزات غلط ہیں، میں روندو نہیں ہوں کہ روتا پھروں گا، اللہ میرے ہاتھ سے اسلام دشمنوں کو نیست ونابود اورسیاسی شکست دے کر رہے گا۔

یہ بھی پڑھیں

مچھر کے کاٹنے سے ہونے والے ڈینگی بخار نے وبا کی صورت اختیار کرلی

مچھر کے کاٹنے سے ہونے والے ڈینگی بخار نے وبا کی صورت اختیار کرلی

پنجاب: سرگودھا میں 50 سے زائد مقامات پر ڈینگی لاروا کی نشاندہی ہوچکی ہے جس …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے