زیادتی کا شکار لڑکی کا ملزم سے نکاح، نابالغ بہن ونی، پنچائت کا ایک اور ظالمانہ فیصلہ

پنچایت نے زیادتی کا شکار لڑکی کا ملزم سے نکاح اور ملزم کی 13 سالہ بہن کا نکاح 14 سالہ لڑکے کے ساتھ کردیا، پولیس نے چھاپہ مار کر لڑکی اور لڑکے کو بازیاب کرلیا ۔روزنامہ دنیا کے مطابق چند روز قبل کوٹ سمابہ کے رہائشی فرمان علی کی بیٹی کوثر بی بی کو غلام اکبر نے گھر سے اغوا کرکے زیادتی کا نشانہ بنایا تھا جس کا مقدمہ تھانہ کوٹ مسابہ میں کوثر بی بی کی مدعیت میں درج ہوا، پنچایت نے غلام اکبر اور کوثر بی بی کا نکاح کرادیا اور بدلے میں ملزم اکبر کی 13 سالہ ہمشیرہ روزینہ مائی کا نکاح فرمان علی کے 14 سالہ بیٹے محمد احسان کے ساتھ پڑھوادیا، پنچایتی فیصلے پر عملدرآمد کرتے ہوئے 13 سالہ روزینہ مائی کا نکاح 14سالہ محمد احسان کے ساتھ سرپنچ فضل حسین کے گھر نکاح خواں اللہ بچایا نے پڑھایا، جس میں دیگر پنچایتی حق نواز، عاشق حسین، محمد بشیر، ریاض احمد اور جمیل احمد وغیرہ موجود تھے۔اطاع پر پولیس نے چھاپہ مار کر حبس بے جا میں موجود روزینہ مائی اور محمد احسان کو بازیاب کرالیا اور دولہا کے والد فرمان علی اور نکاح خواں اللہ بچایا کو بھی گرفتار کرلیا۔ پولیس تھانہ کوٹ سمابہ نے مقدمہ درج کرکے کارروائی شروع کردی۔

یہ بھی پڑھیں

قصور سے اغواء تین بچوں کی لاشیں مل گئیں

قصور سے اغواء تین بچوں کی لاشیں مل گئیں

قصور کے علاقے چونیاں میں ڈھائی ماہ کے دوران اغواء ہونے والے تین بچوں کی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے