خادم رضوی،افضل قادری کوگرفتارکرکے پیش کرنے کا حکم

انسداد دہشتگردی کی عدالت نے تحریک لبیک کے سربراہ علامہ خادم رضوی اور پیر افضل قادری کو گرفتار کرکے پیش کرنے کا حکم دے دیا۔انسداد دہشتگردی کی عدالت میں فیض آباد دھرنا کیس کی سماعت ہوئی۔ دوران سماعت پولیس کی جانب سے حتمی چالان پیش نہ کیے جانے پرعدالت نے سخت اظہار برہمی کا اظہار کیا اور 4 اپریل تک ملزمان کے خلاف مقدمے کا حتمی چالان جمع کرانے کا حکم دے دیا۔ ملزمان کے عدالت میں پیش نہ ہونے پر بھی عدالت نے سخت برہمی کا اظہار کیا اور تحریک لبیک کے سربراہ علامہ خادم رضوی اور پیر افضل قادری کا مفرور کا سٹیٹس برقرار رکھتے ہوئے انہیں گرفتار کرکے پیش کرنے کا حکم دے دیا۔دوسری جانب سپریم کورٹ میں بھی فیض آباد دھرنا کیس کی سماعت ہوئی جس میں آ ئی ایس آئی کی رپورٹ غیر تسلی بخش قرار دے دی گئی۔ سماعت کے دوران جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے سخت برہمی کا اظہار کیا اور دو ہفتوں میں جامع رپورٹ طلب کرلی۔

یہ بھی پڑھیں

میدیکل بورڈ ایک بار پھر خورشید شاہ کا طبی معائنہ کرے گا

میدیکل بورڈ ایک بار پھر خورشید شاہ کا طبی معائنہ کرے گا

اسلام آباد: اس سے قبل خورشید شاہ کو گزشتہ رات پولی کلینک اسپتال لے جایا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے