تعلقات میں بہتری آنے تک پاکستان کا ہائی کمشنر کو واپس دہلی نہ بھیجنے کا فیصلہ

اسلام آباد: پاکستان نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ اپنے ہائی کمشنر کو اس وقت تک نئی دہلی نہیں بھیجے گا جب تک بھارت کے ساتھ تعلقات میں بہتری رونما نہیں ہوتی۔ دفتر خارجہ کے ایک سینئر افسر نے ایک اخبار کے رپورٹر کو نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتائی ہے کہ پاکستان نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ اپنے ہائی کمشنر کو اس وقت تک نئی دہلی نہیں بھیجے گا جب تک بھارت کے ساتھ تعلقات میں بہتری رونما نہیں ہوتی اور بھارتی خفیہ ادارے پاکستانی سفارتی عملے اور ان کے اہل خانہ کو ہراساں کرنے کا سلسلہ ختم نہیں کر دیتے۔ واضح رہے کہ پاکستان نے اپنے سفارتی عملے کو ہراساں کیے جانے کے پے درپے واقعات کے بعد ہائی کمشنر سہیل محمود کو محض مشاورت کے لیے نئی دہلی سے اسلام آباد بلایا تھا، اب فیصلہ کیا گیا ہے کہ وہ فوری طور پر واپس بھارت نہیں جائیں گے۔

یہ بھی پڑھیں

5 احتساب عدالتیں ایسی ہیں جس میں کوئی پریزائڈنگ جج تعینات نہیں

5 احتساب عدالتیں ایسی ہیں جس میں کوئی پریزائڈنگ جج تعینات نہیں

اسلام آباد:چیف جسٹس پاکستان گلزار احمد نے ریمارکس دیے کہ ’نہ تو نیب میں کام …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے