نواز شریف کو جوتا مارنے والا منور ساتھی عبدالغفور سمیت گرفتار

سابق وزیراعظم نواز شریف پر جامعہ نعیمیہ لاہور میں جوتا پھینکنے والا شخص اور اس کا ساتھی دونوں کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔ جوتا مارنے والے شخص کا نام منور ہے جبکہ اس کے ساتھی کا نام عبدالغفور ہے جس نے لال ٹوپی پہن رکھی تھی۔ منور نے جب نواز شریف کو جوتا مارا تو عبدالغفور نے "لبیک لبیک یارسول اللہ، لبیک لبیک یارسول اللہ” کے نعرے بلند کرنا شروع کر دیئے۔ نواز شریف کے محافظوں نے دونوں کو تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد گڑھی شاہو پولیس کے حوالے کر دیا جو اس وقت پولیس کی حراست میں ہیں۔ جوتا منور نامی شخص نے پھینکا جو کہ جامعہ نعیمیہ کا ہی فارغ التحصیل ہے جبکہ نعرے اس کے ساتھی عبدالغفور نے لگائے۔ پولیس نے دونوں کیخلاف مقدمہ بھی درج کر لیا ہے جبکہ ان سے تفتیش کیلئے ماہر تفتیش کار کی خدمات حاصل کی جا رہی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

بجلی بلز میں رعایت ختم کرنے کے معاملے پر ٹیکسٹائل ملز مالکان اور حکومت کے درمیان تنازع

بجلی بلز میں رعایت ختم کرنے کے معاملے پر ٹیکسٹائل ملز مالکان اور حکومت کے درمیان تنازع

لاہور: آل پاکستان ٹیکسٹائلز ملز ایسوسی ایشن (اپٹما) نے وزیر اعظم عمران خان کو خط …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے