مجبور والدین پہ ایک اور قیامت گزر گئی، 6 سالہ بچے کی تشدد زدہ لاش کھیتوں سے برآمد

ضلع مردان کے علاقہ تمبولک باجوڑوں کلے سے گذشتہ روز پراسرار طور پر لاپتہ ہونے والے 6 سالہ بچے کی تشدد زدہ لاش کھیتوں سے برآمد ہوگئی ہے۔ مقتول کے رشتہ دار عبد الرحمٰن کا کہنا ہے کہ 6 سالہ حارث گذشتہ دوپہر کو لاپتہ ہوا تھا جس کو ہر ممکن جگہ پر تلاش کیا لیکن کوئی پتہ نہ چل سکا جس کے بعد انہوں نے تھانہ شیخ ملتون پولیس کو اطلاع کردی۔ پولیس نے بھی بچے کی تلاش شروع کردی لیکن اس کا کوئی سراغ نہ مل سکا اور آج صبح گھر کے قریب واقع کھیتوں سے اُس کی لاش برآمد ہوگئی۔ انہوں نے بتایا کہ ہماری کسی کے ساتھ کوئی دشمنی نہیں ہے۔ اس ضمن میں رابطہ کرنے پر تھانہ شیخ ملتون پولیس نے بتایا کہ بچے کے جسم اور گردن پر تشدد کے نشانات موجود ہیں، جنسی زیادتی کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ ابھی پوسٹ مارٹم رپورٹ موصول نہیں ہوئی جیسے ہی رپورٹ موصول ہوگی تو اس میں واضح ہوجائے گا کہ زیادتی ہوئی ہے یا نہیں۔

یہ بھی پڑھیں

بلاول بھٹو سندھ پر توجہ دیں اور وہاں پر گڈ گورننس لائیں

بلاول بھٹو سندھ پر توجہ دیں اور وہاں پر گڈ گورننس لائیں

پشاور: محمود خان نے کہا کہ بلاول بھٹو زرداری ہم پر انگلی اٹھانے کی بجائے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے