شریف خاندان کے نیب ریفرنسز کی سماعت کرنیوالے جج کی مدت ملازمت میں حکومت نے توسیع کردی، سپریم کورٹ نے کیا کیا، آپ بھی جانیئے

شریف خاندان سمیت کئی اہم نیب ریفرنسز کی سماعت کرنے والے احتساب عدالت کے جج جسٹس محمد بشیر کی مدت ملازمت میں تین سال کی توسیع کر دی گئی ہے۔ وزارت قانون نے اسلام آباد میں احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کی مدت ملازمت میں توسیع کا نوٹیفکیشن جاری کیا ہے، جس کے مطابق محمد بشیر کی مدت ملازمت میں توسیع کی سفارش وزارت قانون کی جانب سے وزیر اعظم کو بھجوائی گئی تھی، وزیر اعظم نے سمری منظور کرنے کے بعد ایوان صدر کو بھجوائی، صدر مملکت ممنون حسین نے وزیر اعظم کی سفارش پر محمد بشیر کی مدت ملازمت میں 3 سال کی توسیع کی منظوری دے دی۔ جج محمد بشیر کو 13 مارچ 2018ء سے13 مارچ 2021 تک توسیع دی گئی ہے۔ اسلام آباد میں احتساب عدالت کے جج محمد بشیر شریف خاندان اور سابق وفاقی وزیر اسحاق ڈار کے خلاف نیب ریفرنسز کی سماعت کررہے ہیں، ان کی مدت ملازمت 13 مارچ 2018ء کو ختم ہو رہی تھی، فاضل جج کی مدت ملازمت میں توسیع کے حوالے سے میڈیا میں نشر ہونے والی خبروں پر سپریم کورٹ نے بھی نوٹس لیا تھا۔ جس پرسیکرٹری قانون نے عدالت میں پیش ہوکر بتایا تھا کہ فاضل جج کی مدت ملازمت میں توسیع کی سمری منظوری کے لیے وزیراعظم کو بھیجی گئی ہے اور سمری 12 مارچ سے پہلے منظور کرلی جائے گی۔

یہ بھی پڑھیں

تاجروں و صنعتکاروں کا دباو اور ردعمل کام دکھا گیا

تاجروں و صنعتکاروں کا دباو اور ردعمل کام دکھا گیا

اسلام آباد: ایف بی آر نے انکم ٹیکس افسران کو کاروباری یونٹس و کاروباری مراکز …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے