دانیال کے بعد طلال کی بھی باری لگ گئی، 14 مارچ کو فردجرم عائد ہوگی

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے توہین عدالت کیس میں دانیال عزیز کے بعد وزیر مملکت طلال چوہدری پر بھی فرد جرم عائد کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں طلال چوہدری کے خلاف توہین عدالت کیس کی سماعت ہوئی، سماعت جسٹس اعجاز افضل کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے کی۔

سماعت کے دورن طلال چوہدری کے وکیل کامران مرتضیٰ نے کہا کہ انہیں اپنے موکل کی تقریر کی سی ڈی تاخیر سے دی گئی جس کے باعث ابھی تک ہم سی ڈی نہیں دیکھ سکے ہیں، لہٰذا سی ڈی دیکھنے کے بعد تفصیلی جواب دیں گے۔ جس پر عدالت نے کہا جو ہونا تھا ہوگیا، اپنے جواب میں جو اضافہ کرنا ہے آئندہ سماعت پر کر دیجئے گا۔ جس کے بعد عدالت نے یہ کہتے ہوئے سماعت 15 مارچ تک ملتوی کردی کہ طلال چوہدری پر فرد جرم اگلی سماعت پر عائد کی جائے گی۔

بعد ازاں طلال چوہدری کے وکیل نے عدالت سے استدعا کی کہ اگلی سماعت 15 کے بجائے 14 مارچ کو کی جائے جس کے بعد عدالت نے وکیل کی استدعا پر فردجرم کی تاریخ 15 سے بدل کر 14 مارچ کردی۔ واضح رہے کہ سپریم کورٹ نے جڑنوالہ میں جلسے کے دوران تقریر میں عدلیہ کے خلاف توہین آمیز زبان استعمال کرنے پرطلال چوہدری کو نوٹس جاری کیا تھا، جبکہ گزشتہ روز وفاقی وزیر دانیال عزیزپر بھی سپریم کورٹ نے توہین عدالت کیس میں فرد جرم عائد کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں

کسی ڈیل کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا، احتساب کا عمل اسی طرح جاری رہے گا

کسی ڈیل کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا، احتساب کا عمل اسی طرح جاری رہے گا

اسلام آباد: وزیر اعظم کی امریکا اور سعودی عرب کے دورے پر بھی مشاورت ہوئی۔ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے