ٹرمپ نے اپنی نوجوان خوبرو میڈیا منیجر سے ایسی بات کہہ دی کہ فوری استعفیٰ دے کر چلی گئی، امریکی صدر کو بڑا جھٹکا

واشنگٹن: ڈونلڈٹرمپ کے وائٹ ہاﺅس کا مکین ہونے کے بعد اب تک کئی آفیسرز تک مستعفی ہو چکے ہیں اور اب صدر ٹرمپ نے اپنی خوبرو کمیونیکیشن ڈائریکٹر کو ایسی بات کہہ ڈالی کہ وہ بھی فوراً استعفیٰ دے کر چلی گئی ہے۔ سی این این کی رپورٹ کے مطابق ہوپ ہکس طویل عرصے سے صدر ٹرمپ کے ساتھ کام کر رہی تھی۔ پہلے وہ ان کی کمپنی میں ہوتی تھی، پھر ان کی صدارتی انتخابی مہم میں آگے آ گے رہی اور پھر ان کے صدر بننے کے بعد وائٹ ہاﺅس میں اسے اعلیٰ عہدہ مل گیا۔ گزشتہ دنوں ہوپ ہکس ہاﺅس انٹیلی جنس کمیٹی کے سامنے پیش ہوئی جو امریکہ کے صدارتی الیکشن میں روسی مداخلت کی تحقیقات کر رہی ہے۔

وائٹ ہاﺅس کے ذرائع کے مطابق سابق ماڈل ہوپ ہکس نے کمیٹی کے سامنے اعتراف کیا کہ ”میں انتخابی مہم کے دوران اور اس کے بعد صدر ٹرمپ کے لیے ’سفید جھوٹ‘ بولتی رہی ہوں۔“ جب ہوپ کا یہ اعتراف صدر ٹرمپ نے سنا تو وہ اس پر برس پڑے اور کہا کہ ”تم اتنی احمق کیسے ہو سکتی ہو، تم نے کمیٹی کے ساتھ یہ اعتراف کیوں کیا؟“ ٹرمپ کے اس ہتک آمیز سلوک پر ہوپ ہکس نے فوری طور پر استعفیٰ دیا اور وائٹ ہاﺅس سے چلی گئی۔

ذرائع نے سی این این کو یہ بھی بتایا کہ ہوپ ہکس کے استعفے سے صدر ٹرمپ کو شدید جھٹکا لگا ہے۔دوسری طرف وائٹ ہاﺅس کے ترجمان ہوگن جیڈ لے نے ٹرمپ کی طرف سے ہوپ ہکس کی سرزنش کرنے کی خبر کی تردید کر دی ہے۔یہاں آپ کو یہ بھی بتاتے چلیں کہ صدر ٹرمپ کے اس قلیل عرصہ صدارت میں اب تک 4 کمیونیکیشن ڈائریکٹر انہیں چھوڑ کر جا چکے ہیں، ان میں شون سپائسر، مائیک ڈیوبکے، انتھونی سکاراموچی اور ہوپ ہکس شامل ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

ایرانی سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای کا امریکا سے بات چیت سے انکار

ایرانی سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای کا امریکا سے بات چیت سے انکار

تہران: ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای نے امریکا سے کسی بھی سطح …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے