مجھے 2 سال تک ان 10 مردوں نے مسلسل۔۔۔ 16 سالہ لڑکی نے پولیس کو ایسی شرمناک ترین بات کہہ دی کہ پاکستانی پوری دنیا کے سامنے شرم سے پانی پانی ہوگئے

لندن: بدقماش لوگ ملک میں ہوں تو لوگوں کا جینا حرام کیے رکھتے ہیں اور بیرون ملک چلے جائیں تو ملک کے نام کو بٹہ لگانے سے باز نہیں آتے۔ ایسے ہی پاکستانیوں کے ایک گروہ نے برطانیہ میں ایک انسانیت سوز کام کر ڈالا ہے کہ سن کر ہر پاکستانی کا سر شرم سے جھک جائے گا۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق 10پاکستانی مردوں کا یہ گروہ کئی سال تک کم عمر لڑکیوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بناتا رہا۔ ان تمام لڑکیوں کی عمریں 12سے 18سال کے درمیان تھیں۔

ان میں سے ایک 16سالہ لڑکی کو انہوں نے اس وقت اپنے چنگل میں پھنسایا جب وہ 14سال کی تھی، انہوں نے اسے منشیات پر لگایا اور دو سال تک اجتماعی زیادتی کا نشانہ بناتے رہے۔ ان بدطینت افراد کے خلاف بریڈفورڈ کراﺅن کورٹ میں مقدمہ زیرسماعت ہے۔ گزشتہ سماعت میں عدالت کو بتایا گیا کہ ملزمان لڑکیوں کو مختلف لالچ دے کر اپنے ساتھ لے جاتے اور منشیات دے کر جنسی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالتے، بعض لڑکیاں منشیات کی عادی ہوکر اور بعض ان کی دھمکیوں کے خوف سے بار بار ان کے پاس جانے پر مجبور ہو جاتیں اور یہ ان کے ساتھ کھلواڑ کرتے رہتے تھے۔ مذکورہ 16سالہ لڑکی بھی کئی بار گھر سے بھاگ کر ان ملزمان کے پاس گئی۔

ان ملزمان میں 37سالہ بشارت خلیق، 31سالہ ذیشان علی، 36سالہ یاسر مجید، 35سالہ پرویز احمد، 31سالہ اظہار حسین، 54سالہ سعید اختر ، 42سالہ نوید اختر،30سالہ محمد عثمان و دیگر شامل تھے۔ دو گورے بھی اس گینگ کا حصہ تھے۔ پراسیکیوٹرز نے عدالت کو بتایا کہ یہ گینگ لڑکیوں کو منشیات پر لگانے اور اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد ان سے جسم فروشی کا دھندہ بھی کرواتا تھا۔ رپورٹ کے مطابق تمام ملزمان نے اپنے خلاف عائد الزامات مسترد کر دیئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

ملکہ برطانیہ نے پرنس اینڈریو کو شاہی ذمہ داریوں سے سبکدوش کر دیا

ملکہ برطانیہ نے پرنس اینڈریو کو شاہی ذمہ داریوں سے سبکدوش کر دیا

ملکہ برطانیہ نے پرنس اینڈریو کو شاہی ذمہ داریوں سے سبکدوش کر دیا۔ برطانوی شاہی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے