پولیس کا فلیٹ پر چھاپہ، اندر خاتون نے اپنی ماں کی لاش 30 سال سے کس حالت میں رکھی ہوئی تھی؟ دیکھ کر پولیس والوں کی بھی سٹی گم ہوگئی

کیف: یوکرین میں ہمسایوں کی اطلاع پر پولیس نے ایک عمر رسیدہ عورت کے فلیٹ پر چھاپہ مارا تو اس کی ضعیف العمر کی ماں کی لاش ایسی حالت میں موجود تھی کہ دیکھ کر پولیس والوں کی بھی سٹی گم ہو گئی۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق یوکرین کے شہر میکولیف میں جب پولیس اس 77سالہ خاتون کے فلیٹ میں داخل ہوئی تو کیا دیکھتی ہے کہ ایک کمرے میں اس کی ماں کی حنوط شدہ لاش چند مذہبی علامات کے سامنے ایک بیڈ پر رکھی ہوئی تھی۔

پولیس نے میڈیا کو بتایا ہے کہ ”اس خاتون کی ماں کا 30سال قبل انتقال ہو گیا تھا اور اس نے تب سے اس کی لاش حنوط کرکے گھر میں رکھی ہوئی تھی۔اس نے ماں کی لاش کو سفید لباس پہنا رکھا تھا اور اس کا سر بھی کپڑے سے ڈھانپا ہوا تھا جبکہ اس کے پیروں میں نیلے رنگ کے جوتے اور سبز رنگ کی جرابیں بھی پہنا رکھی تھیں۔“یہ خاتون خود بھی دونوں ٹانگوں سے مفلوج ہو چکی تھی۔اس کے فلیٹ میں پانی، بجلی، گیس کچھ بھی نہ تھا اور نجانے وہ اس حالت میں کب سے رہ رہی تھی۔جب پولیس اس کے فلیٹ پر پہنچی تو وہ خود بھی قریب المرگ تھی۔ پولیس نے اسے ہسپتال منتقل کر دیا ہے جہاں اس کا علاج جاری ہے۔

اس کے ہمسایوں کا کہنا تھا کہ ”خاتون کبھی اپنے گھر سے باہر نہیں نکلی اور ہم نے کبھی اس کا دروازہ کھلتے ہوئے نہیں دیکھا۔ ہم اس اکیلی خاتون کی مدد کرتے تھے اور کھانا لیجا کر اس کے دروازے کے باہر رکھ دیتے تھے، جسے وہ کسی وقت دروازہ کھول کر اٹھا لیتی اور خالی برتن واپس رکھ دیتی تھی۔چند روز سے وہ کھانا بھی نہیں اٹھا رہی تھی جس پر ہم نے پولیس کو اطلاع دی۔تاہم ہم میں سے کوئی یہ سوچ بھی نہیں سکتا تھا کہ یہ خاتون فلیٹ میں اپنی ماں کی لاش کے ساتھ رہ رہی ہے۔“

یہ بھی پڑھیں

افغان صدر پر چیف ایگزیکٹیو کا الزام

افغان صدر پر چیف ایگزیکٹیو کا الزام

افغانستان کے چیف ایگزیکٹیوعبداللہ عبداللہ نے صدر اشرف غنی پر انتخابی مہم کے دوران سرکاری …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے