سری دیوی کی آخری رسومات ادا کردی گئیں

ممبئی: بالی وڈ کی لیجنڈری اداکارہ سری دیوی کی آخری رسومات ولے پارلے کے شمشان گھاٹ میں ادا کردی گئیں۔ بھارتی میڈیا کے مطابق لیجنڈری اداکارہ کی میت کو صبح ساڑھے 9 بجے سے ساڑھے 12 بجے تک لوکھنڈوالا کے اسپورٹس کلب میں رکھا گیا، جہاں مداحوں نے سری دیوی کا آخری دیدار کیا۔ آنجہانی اداکارہ کے آخری دیدار کے لیے بالی وڈ نگری کے اسٹارز کی بڑی تعداد موجود تھی۔

سری دیوی کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے بڑی تعداد میں مداح اور فلمی ستارے ان کے گھر کے قریب واقع اسپورٹس کلب میں تعزیتی اجتماع میں شریک ہوئے۔

اداکارہ کی آخری رسومات ممبئی کے نواحی علاقے ولے پارلے کے شمشان گھاٹ میں شوہر بونی کپور نے ادا کی۔

سری دیوی کی میت کو دلہن کی طرح تیار کیا گیا تھا اور انہیں لال رنگ کی ساڑھی بھی پہنائی گئی۔ جب کہ اداکارہ کو ریاستی حکومت کی جانب سے گارڈ آف آنر پیش کیا گیا۔

واضح رہے کہ سری دیوی 24 اور 25 فروری کی درمیانی شب دبئی کے ایک ہوٹل کے کمرے میں مردہ حالت میں پائی گئی تھیں۔

ابتدائی طور پر بتایا گیا تھا کہ اداکارہ کی موت حرکت قلب بند ہونے کی وجہ سے واقع ہوئی، تاہم بعدازاں دبئی کے  پبلک پراسیکیوشن نے موت کی وجہ حادثاتی طور پر باتھ ٹب میں ڈوبنے کو قرار دیا تھا۔

سری دیوی کی میت گزشتہ رات بھارتی صنعتکار مکیش امبانی کے نجی چارٹرڈ طیارے کے ذریعے ممبئی پہنچائی گئی تھی ۔

گزشتہ رات بالی وڈ کے دبنگ اداکار سلمان خان بھی رات گئے تعزیت کے لیےاداکارہ کے گھر پہنچے ۔

اس سے قبل دبئی پولیس نے سری دیوی کی موت کی تحقیقات کے سلسلے میں ہوٹل انتظامیہ، پیرا میڈیکس، اداکارہ کے قریبی رشتے داروں اور ان کے شوہر بونی کپور سے تفتیش کی جس کے بعد کیس بند کرکے اداکارہ کی میت لواحقین کے سپرد کردی گئی۔

سری دیوی کا فلمی کیرئیر:

13 اگست 1963 کو پیدا ہونے والی اداکارہ سری دیوی نے 4 سال کی عمر میں فلم نگری میں قدم رکھا اور 1975 میں فلم ’جولی‘ میں بطور معاون اداکارہ بالی وڈ میں کیریئر کا آغاز کیا۔

1978 میں انہوں نے ‘سولہواں ساون’ میں مرکزی کردار کیا اور اگلی ہی فلم ‘ہمت والا’ سے مقبول ہوگئیں، فلم ‘صدمہ’ میں سری دیوی کےکردار کو ان کی بہترین پرفارمنس قرار دیا جاتا ہے۔

نٹ کھٹ اداؤں اور چمکتی آنکھوں والی سری دیوی نے اپنی اداکاری سے کروڑوں مداحوں کے دلوں پر راج کیا۔ چارلی چپلن کی نقل ہو یا ناگن کا روپ یا پھر بیوی، ماں اور بیٹی کا رول، سری دیوی نے ہر کردار ایسے نبھایا کہ امر ہوگیا۔

سری دیوی کو 5 بار ‘فلم فیئر’ ایوارڈ اور 2013 میں بھارت کے چوتھے بڑے ایوارڈ ‘پدم شری’ سے بھی نوازا گیا۔

سری دیوی نے 300 سے زائد تامل، تیلگو، ملیالم اور ہندی فلموں میں اپنی صلاحیتوں کے جوہر دکھائے، ان کی شہرہ آفاق فلموں میں ’مسٹر انڈیا‘، ’چاندنی‘، ’ناگن‘، ’لمحے‘، ’وقت کی آواز‘ اور ’خدا گواہ‘ شامل ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

محکمہ جنگلی حیات کی رابی پیر زادہ کیخلاف کارروائی

لاہور: گلوکارہ رابی پیرزادہ کو گھر میں اژدھے، مگرمچھ اور سانپ رکھنا مہنگا پڑ گیا۔ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے