مری میں جلائی جانے والی19سالہ لڑکی پمزاسپتال میں دم توڑ گئی

مری میں جلائی جانے والی 19 سالہ لڑکی پمز اسپتال میں دم توڑ گئی،رشتے سے انکار پر نامعلوم افراد نے خاتون ٹیچر پر پیٹرول چھڑک کر آگ لگادی تھی.

تفصیلات کے مطابق مری کی یونین کونسل ڈیوال میں جلائی جانے والی 19 سالہ لڑکی پمز اسپتال میں انتقال کرگئی، گذشتہ روز مری میں دلخراش واقعہ پیش آیا تھا جس میں خاتون کے رشتے سے انکار کرنے پر نامعلوم ملزمان نے اسے تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد پیٹرول چھڑک کر آگ لگادی تھی.

میڈیکل لیگو آفیسر کے مطابق متاثرہ خاتون کی حالت تشیویشناک تھی اور خاتون کے جسم کا 80 فیصد حصہ جھلس چکا تھا، متاثرہ خاتون کو اسلام آباد کے پمز اسپتال کے انتہائی نگہداشت وارڈ میں رکھا ہوا تھا

مقامی پولیس کی جانب سے نامعلوم ملزمان کے خلاف واقعے کا مقدمہ درج کرلیاگیاتھا، پولیس حکام کے مطابق ایک مقام پر چھاپہ مار کر کارروائی میں استعمال ہونے والا پیٹرول برآمد کرلیاگیا

یہ بھی پڑھیں

کیا دنیا خاموشی سے مقبوضہ کشمیر میں مسلمانوں کی نسل کشی دیکھتی رہے گی: وزیراعظم

کیا دنیا خاموشی سے مقبوضہ کشمیر میں مسلمانوں کی نسل کشی دیکھتی رہے گی: وزیراعظم

وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کیا دنیا خاموشی سے مقبوضہ کشمیر میں مسلمانوں کی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے