زینب قتل کیس؛ عمران علی کے خلاف جیل میں مقدمے کی سماعت کا فیصلہ

لاہور: محکمہ داخلہ پنجاب نے ننھی زینب سمیت کئی بچیوں کے قاتل عمران علی کے خلاف مقدمہ جیل میں چلانے کا فیصلہ کیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق محکمہ داخلہ پنجاب نے قصورمیں زینب سمیت بچیوں کوزیادتی کے بعد قتل کرنے والے عمران علی کا ٹرائل جیل میں کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے، یہ فیصلہ عمران علی کی سیکیورٹی کویقینی بنانے کے لیے کیا گیا ہے، عمران علی کوکوٹ لکھپت جیل میںرکھا جائے گا ، جیل میں ملزم کے لئے خصوصی سیل بنادیا گیا ہے جس میں سی سی ٹی وی کیمرے نصب ہیں، ان کیمروں کی مدد سے عمران علی پرنظررکھی جائے گی تاکہ وہ کوئی انتہائی قدم نہ اٹھا سکے۔

دوسری جانب پراسکیوٹرجنرل پنجاب نے مقدمے میں ہونے والی پیش رفت اورملزم کی سیکیورٹی اقدامات کے حوالے سے رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کرادی ہے، جس میں کہا گیا ہے کہ ملزم 8 بچیوں اورزیادتی کے قتل میں ملوث ہے، جیل میں ٹرائل کا فیصلہ سکیورٹی خدشات کے باعث کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ قصورکے عمران علی عرف مانا پر8 سالہ زینب سمیت کئی بچیوں کو اغوا کرکے انہیں زیادتی کے بعد قتل کرنے کا الزام ہے، ڈی این اے ٹیسٹ سے الزامات ثابت ہوگئے ہیں اور ملزم نے بھی اپنے مکروہ افعال کا اعتراف بھی کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

سی پیک منصوبہ آج وزارت ریلوے میں جمع کروایا جائے گا

سی پیک منصوبہ آج وزارت ریلوے میں جمع کروایا جائے گا

لاہور: منظوری کیلئے پلاننگ کمیشن کو بھجوائے گی، منصوبہ 9 سالوں میں مکمل ہو گا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے