13 سالہ بچی زیادتی کے بعد قتل

کوئٹہ: بلوچستان کے دارالخلافہ کوئٹہ میں 13 سالہ بچی کو زیادتی کے بعد قتل کردیا گیا وزیر اعلیٰ بلوچستان نے نوٹس لیتے ہوئے پولیس کو دو روز میں ملزم کو گرفتار کرنے کی ہدایت دے دی۔ کوئٹہ کے علاقے کلی اسماعیل میں 13 سالہ ایک بچی نیم بے ہوشی کی حالت میں کچرے سے ملی، امدادی ادارے نے فوری طور پر بچی کو وہاں سے سول اسپتال کوئٹہ منتقل کیا تاہم بچی اسپتال پہنچتے ہی جاں بحق ہوگئی۔ بچی کے بھائی کامران نے بتایا کہ وہ آدھے گھنٹے کے لیے گھر سے باہر گیا اور واپس آیا تو اس کی بہن گھر سے غائب تھی اور کچرے سے نیم بے ہوشی کی حالت میں ملی۔سول اسپتال کی پولیس سرجن ڈاکٹر نور بلوچ نے بتایا کہ ابتدائی شواہد کے مطابق بچی کے ساتھ زیادتی کی گئی ہے اور اسے تشدد کا بھی نشانہ بنایا گیا ہے حتمی رپورٹ پوسٹ مارٹم کے بعد سامنے آئے گی۔ایس ایس پی آپریشن نصیب اللہ نے بتایا کہ قاتل کی نشاندہی کے لیے ڈی این اے سیمپل حاصل کرکے لاہور میں فرانزک لیبارٹری کو ارسال کردیا ہے جبکہ اہل خانہ کے بیانات قلم بند کرلیے ہیں مزید تفتیش جاری ہے۔وزیر اعلیٰ بلوچستان عبدالقدوس بزنجو نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے ڈی آئی جی پولیس کو فوری طور پر واقعے کی تحقیقات کا حکم دیتے ہوئے دو روز میں ملزم کو گرفتار کرنے کا حکم دے دیا۔

یہ بھی پڑھیں

یوٹیلیٹی اسٹورز, پر, خصوصی, ریلیف پیکیج کا, اعلان

یوٹیلیٹی اسٹورز پر خصوصی ریلیف پیکیج کا اعلان

کوئٹہ: وفاقی حکومت کی جانب سے رمضان شروع ہونے سے قبل یوٹیلیٹی اسٹورز پر خصوصی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے