کانگو میں عسکریت پسندوں کا حملہ، امن مشن میں شامل پاکستانی فوجی شہید

کنشاسا: کانگو میں عسکریت پسندوں کے حملے میں اقوام متحدہ کے امن مشن میں شامل ایک پاکستانی فوجی شہید اور ایک زخمی ہوگیا۔ غیر ملکی خبر ایجنسی کے مطابق کانگو کے جنوبی صوبے کیوو میں ایک مسلح گروپ کے جنگجوؤں نے گھات لگا کر اقوام متحدہ کے امن مشن پر حملہ کیا جس کے نتیجے میں ایک پاکستانی فوجی جاں بحق ہوگیا۔ ترجمان اقوام متحدہ نے واقعے کی تصدیق کردی ہے۔

علاوہ ازیں پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کی طرف سے جاری کردہ بیان کے مطابق کانگو کے جنوبی صوبہ کیوو کے علاقہ براکا میں مسلح باغیوں نے پاکستانی امن مشن کے قافلے پر حملہ کیا، فائرنگ کے تبادلے میں نائیک نعیم رضا شہید اور سپاہی بلال زخمی ہوگیا۔ پاکستانی اہلکاروں کی موثر جوابی کارروائی سے مسلح باغیوں کا حملہ پسپا کردیا گیا۔ آئی ایس پی آر کے مطابق اقوام متحدہ امن مشن میں پاکستان کے 156 اہلکار شہید ہوچکے ہیں۔

اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انٹونیو گوئٹریش نے حملے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ واقعے کے ذمے دارو​ں کو انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے گا، کانگو کی حکومت کے ساتھ تناؤ کے باوجود ملک کے سیکیورٹی چیلنجز سے نمٹنے کی کوششیں جاری رکھی جائیں گی۔ سیکریٹری جنرل اقوام متحدہ نے امن مشن میں تعینات پاکستانی جوان کی شہادت پر اظہار افسوس کرتے ہوئے کہا کہ زخمی جوانوں کی جلد صحت یابی کیلیے دعاگو ہیں۔

گزشتہ روز کانگو کے صدر جوزف کابیلا نے اقوام متحدہ کے امن مشن پر 20 سال گزرنے کے باوجود مقامی عسکریت پسندوں سے نمٹنے میں ناکام رہنے کا الزام عائد کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں

امریکا نے ایرانی آئل ٹینکر کو قبضے میں لینے کے لیے وارنٹ جاری کردیے

امریکا نے ایرانی آئل ٹینکر کو قبضے میں لینے کے لیے وارنٹ جاری کردیے

واشنگٹن: امریکی محکمہ قانون نے پکڑے گئے ایرانی آئل سپر ٹینکر کو قبضے میں لینے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے