شمالی کوریا جوہری میزائل پریڈ کے لیے نہیں بنا رہا: سی آئی اے

واشنگٹن: مریکہ کے خفیہ ادارے سی آئی اے کے سربراہ مائک پومپیو نے کہا ہے کہ شمالی کوریا امریکہ کو خطرہ پہنچانے والی جوہری صلاحیت حاصل کرنے سے اب چند ماہ کے فاصلے پر ہے۔ اور شمالی کوریا کے حکمران کم یونگ ان ایک کامیاب میزائل تجربے کے بعد مزید تجربات کرنا بند نہیں کریں گے۔غیرملکی میڈیا کے مطابق امیریکن اینٹرپرائز انسٹیٹیوٹ میں گفتگو کرتے ہوئے مائک پومپیو کا کہنا تھا کہ ٹرمپ انتظامیہ شمالی کوریا کو امریکہ پر جوہری میزائل داغنے سے روکنے کا عزم رکھتی ہے اور اس مقصد کے لیے ماضی کے برعکس مزید وسائل مختص کرنا ہوں گے۔ان کا یہ بیان ایک ایسے وقت آیا ہے جب امریکہ نے عالمی برادری سے یہ مطالبہ کر رکھا ہے کہ شمالی کوریا کی جوہری صلاحیت کو بڑھنے سے روکنے کے لیے اس پر مزید مالی اور معاشی پابندیاں لگائی جائیں۔انھوں نے شمالی کوریا سے متعلق اپنی پالیسی واضح کرتے ہوئے کہا ‘کم یونگ ان ایک کامیاب تجربہ کر کہ پیچھے نہیں ہٹیں گے ،اگلا قدم یہی ہو گا کہ مزید ہتھیار بنائے جائیں جو صرف 8 فروری (شمالی کوریا کی فوج کا دن) کی پریڈ کے لیے نہیں ہوں۔شمالی کوریا کی یہ صلاحیت امریکہ کے لیے ایک بڑا خطرہ ہے اور صدر ٹرمپ نے حکومت کو یہی ہدایت کی ہے کہ ایسا کرنے سے شمالی کوریا کو روکا جائے۔

یہ بھی پڑھیں

جرمنی کی, حکومت ایران کے, ساتھ بحران میں ثالثی, کا کردار, ادا کرنا, چاہتی ہے

جرمنی کی حکومت ایران کے ساتھ بحران میں ثالثی کا کردار ادا کرنا چاہتی ہے

برلن: جرمنی کی حکومت ایران کے ساتھ بحران میں ثالثی کا کردار ادا کرنا چاہتی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے