پانچ سالہ مغوی بچے کی تشدد زدہ لاش کھیتوں سے برآمد

لکی مروت: خیبرپختونخوا کے جنوبی ضلع لکی مروت سے چند روز قبل اغوا ہونے والے 5سالہ بچے کی لاش برآمد ہوئی ہے ، بچے کو رسی کے ذریعے پھندا ڈال کر قتل کیا گیا تھا 19 جنوری کو لکی مروت سے 5سالہ روحیل کو اغوا کیا گیا تھا ، اس کے اہل خانہ نے پولیس میں رپورٹ درج کرائی جبکہ اپنی بھی تلاش جاری رکھی۔اغوا کے چار روز گذرنے کے بعد آج صبح تھانہ نورنگ کی حدود میں واقع علاقے برگئی کے کھیتوں سے معصوم بچے کی لاش ملی ہے۔ پولیس نے لاش کو قبضے میں لے کر اس کی پوسٹ مارٹم کرائی ،پوسٹ مارٹم رپورٹ کے بعد پولیس نے لاش مقتول کے ورثا کے حوالے کردی ۔
ضرور پڑھیں:’’میں قسم کھا کر کہتاہوں کہ میں جائے وقوعہ پر پہنچا تو وہاں۔۔۔‘‘ نقیب اللہ محسود قتل کیس میں مفرور راو انوار بھی بول پڑے ،انتہائی حیران کن بات کہہ دی۔ پوسٹ مارٹم رپورٹ کے مطابق مقتول کو رسی کے ذریعے پھندا ڈال کر قتل کیا گیا تھا۔ 4روز گزرنے کے باوجود پولیس قاتلوں کو گرفتار کرنے میں ناکام رہی ہے ۔پولیس کے مطابق معصوم بچے کو زیادتی کا نشانہ بنائے جانے کے امکانات بھی ہیں تاہم رپورٹ آنے کے بعد ہی اس حوالے سے کوئی بات کہی جا سکتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

ڈاکٹرز, کی ہڑتال, کے, باعث شہریوں کو, شدید پریشانی, کا سامنا

ڈاکٹرز کی ہڑتال کے باعث شہریوں کو شدید پریشانی کا سامنا

 پشاور: ڈاکٹرز کی ہڑتال کے باعث شہریوں کو شدید پریشانی کا سامنا ہے، سرکاری اسپتالوں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے