زینب قتل کیس کو سستی شہرت کے لئے استعمال نہیں کرنے دیں گے، چیف جسٹس

لاہور: چیف جسٹس پاکستان جسٹس ثاقب نثار کا کہنا ہے کہ زینب قتل کیس کو سستی شہرت کے لئے استعمال کرنے کی اجازت نہیں دیں گے اور ہمیں زیادہ پتہ ہے کہ اس کیس کو کیسے منطقی انجام تک پہنچانا ہے۔ تفصیلات کے مطابق سول سوسائٹی کے نمائنڈے عبداللہ ملک کی جانب سے زینب ازخود نوٹس کیس میں فریق بننے کی درخواست کی سماعت ہوئی۔ کیس کی سماعت چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے کی۔ درخواست گزار نے استدعا کی کہ زینب قتل کیس میں سول سوسائٹی کو بھی فریق بننے کی اجازت دی جائے۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے ریمارکس دیئے کہ عدالتِ عظمیٰ کو زینب قتل کیس میں کسی سول سوسائٹی کی معاونت کی ضروت نہیں، ہمیں زیادہ بہتر پتہ ہے کہ اس کیس کو کس طرح منطقی انجام تک پہنچانا ہے۔ چیف جسٹس نے کہا کہ زینب قتل کیس کو سستی شہرت حاصل کرنے کے لئے استعمال کرنے کی اجازت نہیں دیں گے اس کیس کے ذریعے عوامی پذیرائی حاصل کرنے کی کوشش نہ کریں۔ عدالت نے سول سوسائٹی کے نمائندے کی متفرق درخواست خارج کردی۔

یہ بھی پڑھیں

پرائس کنٹرول مجسٹریٹس دفاتر میں بیٹھنے کی بجائے فیلڈ میں جا کرقیمتیں چیک کریں

پرائس کنٹرول مجسٹریٹس دفاتر میں بیٹھنے کی بجائے فیلڈ میں جا کرقیمتیں چیک کریں

لاہور: وزیراعلیٰ پنجاب نے مہنگائی پرقابو پانے کے لیے عملی اقدامات کی ہدایت کرتے ہوئے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے