نقیب محسود کیس، راؤ انوار کیخلاف مقدمہ کا اندراج روک دیا گیا

کراچی: نقیب محسود کی ہلاکت کے معاملے پر پولیس حکام نے تحقیقاتی کمیٹی کی سفارش پر راؤ انوار کے خلاف مقدمہ کا اندراج روک دیا ہے۔ پولیس کا مؤقف ہے جب تک نقیب اللہ کے لواحقین باقاعدہ مقدمہ درج کرانے نہ آئیں تب تک کسی افسر یا اہلکار کے خلاف مقدمہ درج نہ کیا جائے۔ تحقیقاتی کمیٹی نے پہلے راؤ انوار کے خلاف مقدمہ درج کرنے کی سفارش کی تھی لیکن پولیس حکام نے اب اسے روک دیا ہے۔ پولیس کا مؤقف ہے جب تک نقیب اللہ کے لواحقین باقاعدہ مقدمہ درج کرانے نہ آئیں تب تک کسی افسر یا اہلکار کے خلاف مقدمہ درج نہ کیا جائے، اگر نقیب اللہ کا کوئی وارث مقدمہ درج کرانا چاہتا ہے تو کرائے۔

ذرائع کا کہنا ہے مقدمہ میرٹ اور انکوائری کمیٹی کو میسر شواہد کی روشنی میں درج کیا جائے، نقیب اللہ کی ہلاکت کا معاملہ حساس ہے مقدمہ کے لئے مدعی ہونا ضروری ہے، اس حوالے سے درج کمزور مقدمے سے ملوث افسران و اہلکاروں کا فائدہ پہنچ سکتا ہے۔ نقیب قتل کیس پر بنائی گئی تحقیقاتی کمیٹی نے گذشتہ روز راؤ انوار سمیت تمام پولیس اہلکاروں کے خلاف مقدمہ درج کرنے کی سفارش تھی جبکہ آئی جی سندھ کا کہنا تھا کہ انکوائری مکمل ہونے کے بعد واقعے میں ملوث اہلکاروں کیخلاف مزید کارروائی ہوگی۔

یہ بھی پڑھیں

وفاقی حکومت کا اقدام صوبائی خود مختاری پر حملے کے مترادف ہے

وفاقی حکومت کا اقدام صوبائی خود مختاری پر حملے کے مترادف ہے

کراچی: بلاول بھٹو نے کہا کہ وفاقی حکومت عوامی ردعمل سے پہلے اسپتالوں پر اپنا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے