نواب ثناء اللہ زہری نے مشاورت کے بغیر استعفٰی دیا، سردار یعقوب خان ناصر

کوئٹہ:  پاکستان مسلم لیگ (ن) کے مرکزی سینئر نائب صدر و سینیٹر سردار یعقوب خان ناصرنے کہا ہے کہ بلوچستان میں مسلم لیگ (ن) کی حکومت ختم کرنے میں ان نادیدہ قوتوں کا ہاتھ تھا، جن کا نام بھی نہیں لے سکتا۔ سابق وزیراعظم میاں محمد نواز شریف نے نواب ثناء اللہ خان زہری کو مستعفی نہ ہونے کا مشورہ دیا تھا۔ تاہم وہ پہلے ہی استعفٰی دے چکے تھے۔ یہ بات انہوں نے نجی ٹی وی سے بات چیت کرتے ہوئے کہی۔ سردار یعقوب خان ناصر نے کہا کہ وزیراعلٰی نواب ثناء اللہ زہری کی حکومت ہٹانے میں کچھ ہاتھ سابق صدر آصف علی زرداری کا بھی تھا۔ جن ارکان نے وزیراعلٰی کے خلاف تحریک عدم اعتماد اور حکومت ختم کرنے کے کھیل میں حصہ ڈالا، ان کے تعلقات سے سب واقف ہیں۔ کچھ قوتیں یہ نہیں چاہتی کہ سینیٹ کے انتخابات ہوں اور مسلم لیگ (ن) کو سینیٹ میں اکثریت ملے۔ جو ارکان اسمبلی نواب ثناء اللہ خان زہری کے خلاف تحریک عدم اعتماد لائے وہ ساڑھے چار سال سے کہاں تھے۔؟ اب جب حکومت کی مدت ختم ہونے میں صرف چند ماہ باقی ہے انہیں تحریک عدم اعتماد لانے کا خیال کیوں آیا۔؟ بلوچستان میں وزیراعلٰی نواب ثناء اللہ زہر ی کی حکومت ختم کرنے میں دیگر قوتوں کا بھی کردار تھا۔

یہ بھی پڑھیں

کوئی غیر ملکی کمپنی بلوچستان میں ایک انچ بھی زمین نہیں خرید سکتی

کوئی غیر ملکی کمپنی بلوچستان میں ایک انچ بھی زمین نہیں خرید سکتی

کوئٹہ: ثنا بلوچ اور دیگر اراکین نے یہ معاملہ اٹھاتے ہوئے کہا کہ منتخب اراکین …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے