نقیب اللہ کی پولیس مقابلے میں ہلاکت، آئی جی سندھ نے 3رکنی تحقیقاتی کمیٹی بنادی

کراچی: آئی جی سندھ پولیس اے ڈی خواجہ نے نقیب اللہ محسود کی گھر سے حراست اور پولیس مقابلے میں ہلاکت کے معاملے کی تحقیقات کے لئے کمیٹی تشکیل دے دی ہے، جس کی سربراہی آئی جی سی ٹی ڈی ثنااللہ عباسی کریں گے۔تفصیلات کے مطابق نقیب محسود کے قتل کی تحقیقات کے لئےآئی جی سندھ اے ڈی خواجہ نے اعلیٰ افسران پر مشتمل تین رکنی تحقیقاتی کمیٹی تشکیل دی گئی، جس کی سربراہی آئی جی سی ٹی ڈی ثنااللہ عباسی کریں گے دیگر میں ڈی آئی جی ایسٹ سلطان خواجہ اورڈی آئی جی ساﺅتھ شامل ہیں۔واضح رہے کہ راو انوار نے میڈیا سے گفتگو میں 13 جنوری کو کراچی کے علاقے شاہ لطیف ٹاون میں پولیس مقابلے کے دوران 4 دہشت گردوں کی ہلاکت کا دعویٰ کیا تھا۔ان میں مبینہ طور پر تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) اور کالعدم لشکر جھنگوی سے تعلق رکھنے والا نقیب اللہ بھی شامل تھا۔راو انوار کا دعویٰ تھا کہ نقیب اللہ جیل توڑنے، صوبیدار کے قتل اور ایئرپورٹ حملے میں ملوث مولوی اسحاق کا قریبی ساتھی تھا۔

یہ بھی پڑھیں

پاکستان کا 72 واں جشن آزادی

ملک بھر میں جشن آزادی ملی جوش و جذبے کے ساتھ منایا جارہا ہے آج …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے