زینب کا قاتل بچیوں کی گردن پہ چوٹ مار کر انہیں ہلاک کرتا رہا

قصور: قصور میں پیش آنے والے انسانیت سوز واقعے کی تفتیشی ٹیم کی رپورٹ منظرعام پر آگئی جس کے مطابق معصوم زینب کی موت کچرے پر پھینکے جانے کے کئی گھنٹے بعد ہوئی اس کیس میں اب تک ایک ہزارافرادسے تحقیقات کی جارہی ہیں۔ تفتیشی ٹیم نے زینب کیس کی رپورٹ تیار کر لی ہے جسے کل عدالت میں پیش کیا جائے گا۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ملزم اکیلا کارروائی کرتا رہا اب تک کسی منظم گروہ کے کو ئی شواہدنہیں ملے۔رپورٹ کے مطابق 30 مختلف ٹیمیں شواہد اکٹھے کرنے میں مصروف ہیں جبکہ اس سلسلے میں 100افراد کے ڈی این اے ٹیسٹ لیے گئےہیں ۔رپورٹ میں لکھا گیا ہے کہ ملزم بچیوں کی گردن پرچوٹ لگا کر ویران جگہ پر پھینکتارہا،زیادہ تر بچیوں کی موت پھینکے جانے کے بعد ہوئی۔

یہ بھی پڑھیں

بزرگ شہریوں کے لیے خصوصی پروگرام شروع کیے ہیں

بزرگ شہریوں کے لیے خصوصی پروگرام شروع کیے ہیں

لاہور: وزیر اعلیٰ کا کہنا تھا کہ بزرگوں کا احساس کرنا اور خیال رکھنا ہمارا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے