جولائی کے انتخابات میں دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہوجائے گا، وزیراعظم

صادق آباد: وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا ہے کہ مخالفین جولائی کے انتخابات میں آکر مقابلہ کرلیں دودھ کا دودھ پانی کا پانی ہوجائے گا۔ صادق آباد میں آر این ایل جی کی ترسیل اور فراہمی کےمنصوبےکی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ حکومت میں آئے تو صنعتیں اور کارخانے بند تھے، سی این جی اسٹیشنز میں گیس نہیں تھی، ماضی میں ترقی کی شرح 3 فیصد سے بھی کم تھی۔

شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ نواز شریف وہ لیڈر ہیں جو وعدے نہیں کام کرکے دکھاتے ہیں، 2013 میں حکومت آئی تو 1800 کلومیٹر موٹروے تعمیر کرائی، اضافی گیس مہیا کیے بغیر پاکستان کے مسائل حل نہیں ہوسکتے تھے اسی لئے سابق وزیراعظم کا وژن اور جذبہ تھا کہ ملک میں آئندہ 15 سال کے منصوبے بھی بنائیں گے، پاکستان کی تاریخ میں 42 انچ قطر کی کوئی گیس پائپ لائن نہیں ڈالی گئی ہماری حکومت میں ریکارڈ مدت میں 14 سو کلو میٹر گیس کی پائپ لائن بچھائی گئی، آج ہر صارف کو گیس فراہم کی جا رہی ہے اور کارخانے و صنعتیں لگانےکے لیے گیس میسر ہے، جتنے گیس کنکشن ہمارے دور میں دیے گئے اس کی مثال نہیں ملتی۔
وزیراعظم نے مزید کہا کہ اگر ہم گیس کا مسئلہ حل نہ کرتے تو بجلی کے مسائل بھی حل نہ ہوتے، آج ملک میں بجلی کے بحران کو حل کر دیا گیا ہے، بجلی کے کارخانے بھی چل رہے ہیں جنہیں چلانےکے لیے تیل درآمد نہیں کررہے، کیا پاکستان کے پاس پہلے یہ وسائل نہیں تھے؟ ماضی میں بھی وسائل تھے لیکن انہیں بروئے کار نہیں لایا گیا، میرا مخالفین کو چیلنج ہے، اپنے 15 سال کے دور میں ایک منصوبہ دکھا دیں۔

یہ بھی پڑھیں

نواز شریف, سے کوٹ لکھپت جیل, میں اہل خانہ اور, پارٹی رہنماؤں, کی ملاقات

نواز شریف سے کوٹ لکھپت جیل میں اہل خانہ اور پارٹی رہنماؤں کی ملاقات

لاہور: نواز شریف سے جیل میں ملاقات کے لیے مختص ہے اور جیل انتظامیہ کی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے