دہشتگردوں کی فائرنگ سے 14 مسیحی ہلاک

نائیجیریا کی ایک ریاست میں رات گئے عبادت سے واپس آنے والے مسیحیوں پر فائرنگ کر دی گئی جس کے نتیجے میں 14 افراد ہلاک ہو گئے۔ فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کی رپورٹ کے مطابق ایک مقتول کے رشتہ دار نے بتایا کہ ’مسلح افراد نے اس وقت فائرنگ کی جب یہ افراد سال نو سے متعلق چرچ میں ہونے والی عبادت میں شرکت کے بعد واپس لوٹ رہے تھے‘۔ فائرنگ کا یہ واقعہ نائیجیریا کے جنوبی علاقے میں پورٹ ہارکورٹ میں پیش آیا، یہ علاقہ تیل کا حب تصور کیا جاتا ہے۔ پولیس اہلکار نے نام ظاہر نہ کرنے کی درخواست پر بتایا کہ ’حملے میں 14 افراد موقع پر ہی ہلاک ہو گئے جبکہ 12 افراد فائرنگ سے زخمی بھی ہوئے جنہیں علاج کے لیے قریبی ہسپتال منتقل کر دیا گیا‘۔ ریورز اسٹیٹ پولیس کے شعبہ تعلقات عامہ کے آفیسر نامدی اومانی کا کہنا تھا کہ فوری طور پر واقعے میں ہلاک ہونے والوں کی حتمی تعداد کے بارے میں تصدیق نہیں کی جا سکتی۔ انہوں نے مزید کہا کہ پولیس کمشنر احمد ذکی نے واقعے کے فوری بعد ملزمان کی گرفتاری کے لیے سرچ آپریشن کے آغاز کا حکم دے دیا۔ خیال رہے کہ نائیجیریا کا یہ علاقہ تیل کی دولت سے مالا مال ہے اور ساتھ ہی یہاں متعدد طاقت ور ترین گینگز بھی موجود ہیں، جس کے باعث یہ علاوہ بدامنی کا شکار بھی رہتا ہے۔ انہیں گینگز میں نائیجیریا کا ایک ’کلٹس‘ نامی گینگ بھی شامل ہے جس کا آغاز دہائیوں قبل یونیورسٹی سے شروع ہونے والی ایک تحریک سے ہوا اور اب یہ گینگ متاثرہ خطے کی سڑکوں پر طاقت کا مظاہرہ کرتا نظر آتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

گرین لینڈ کے جزیرے کے باشندوں کا ٹرمپ کے فیصلے پر شدید ردعمل

گرین لینڈ کے جزیرے کے باشندوں کا ٹرمپ کے فیصلے پر شدید ردعمل

ڈنمارک کے زیر تسلط خود مختار علاقے گرین لینڈ کو خریدنے کے بارے میں امریکی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے