وزیر داخلہ بلوچستان سرفراز بگٹی کا مستعفی ہونے کا فیصلہ

کوئٹہ: بلوچستان اسمبلی کے اراکین کی جانب سے وزیراعلیٰ بلوچستان نواب ثناء اللہ زہری کے خلاف تحریک عدم اعتماد جمع کروائے جانے کے بعد وزیر داخلہ بلوچستان سرفراز بگٹی نے مستعفی ہونے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ سرفراز بگٹی جلد اپنا استعفیٰ وزیراعلیٰ بلوچستان کو پیش کردیں گے۔ تاحال ان کے استعفے کی وجہ کا باضابطہ اعلان تو نہیں ہوسکا تاہم ذرائع کے مطابق اس کی وجہ آج بلوچستان اسمبلی میں جمع کروائی گئی تحریک عدم اعتماد ہے۔

دوسری جانب وزیر ماہی گیری بلوچستان میر سرفراز چاکر ڈومکی نے وزیراعلیٰ بلوچستان کو اپنا استعفیٰ پیش کردیا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ صوبائی وزیر نے اپنا استعفیٰ پیش کردیا ہے۔

اس سے قبل بلوچستان اسمبلی کے اراکین نے وزیراعلیٰ بلوچستان کے خلاف عدم اعتماد جمع کرائی تھی۔ بلوچستان اسمبلی کے 14 اراکین کی جانب سے وزیراعلیٰ کے خلاف عدم اعتماد کی تحریک جمع کرائی گئی۔

تحریک عدم اعتماد رکن اسمبلی عبدالقدوس بزنجو اور سید آغارضا کی جانب سے جمع کرائی گئی جس پر 14 اراکین اسمبلی کےدستخط ہیں۔

عدم اعتماد کی تحریک پر رکن اسمبلی میر قدوس بزنجو، میر کریم نوشیروانی، آغا رضا، میر خالد لانگو، نوابزادہ طارق مگسی، ڈاکٹر رقیہ سعید ہاشمی، محمد اختر مگسی، زمرد خان اچکزئی، حسین بانو، شاہدہ رؤف، خلیل الرحمان، عبدالمالک کاکٹر اور امان اللہ نوتیزئی شامل ہیں۔

خیال رہے کہ وزیراعلیٰ بلوچستان نواب ثنااللہ زہری کا تعلق مسلم لیگ (ن) سے ہے اور ان سے قبل نیشنل پارٹی سے تعلق رکھنے والے عبدالمالک بلوچ وزیراعلیٰ بلوچستان کے عہدے پر فائز تھے۔

یہ بھی پڑھیں

دھماکے میں قیمتی جانی نقصان پر دلی دکھ اور افسوس کا اظہار

دھماکے میں قیمتی جانی نقصان پر دلی دکھ اور افسوس کا اظہار

کوئٹہ: صوبائی کابینہ کے اجلاس کے دوران دہشت گرد عناصر اور ان کے سرپرستوں کو …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے