کوئٹہ، ایف سی کی گاڑی پہ بم حملہ، 4 افراد شہید، 18 زخمی

کوئٹہ: صوبائی دارالحکومت کوئٹہ میں دہشت گردوں نے ایف سی کی گاڑی کو بم سے نشانہ بنایا ہے، جس کے نتیجے میں چار افراد شہید اور 18 زخمی ہوگئے ہیں۔ کوئٹہ میں سریاب روڈ پر دھماکا ہوا جس کے نتیجے میں 4 افراد جاں بحق اور 18 زخمی ہوگئے۔ صوبائی وزیر داخلہ سرفراز بگٹی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ دھماکہ خود کش تھا، جس میں ایف سی کمانڈنٹ کی گاڑی کو نشانہ بنایا گیا۔ واقعے کی تحقیقات کے لیے فارنزک ٹیم طلب کرلی گئی ہے۔ ڈی آئی جی عبدالرزاق چیمہ نے بتایا کہ گاڑی کمانڈنٹ ایف سی کرنل اشتیاق کو لینے جارہی تھی تاہم کمانڈنٹ ایف سی گاڑی میں موجود نہیں تھے جبکہ حملے میں فورسز کے چار اہلکار بھی زخمی ہوئے۔ دھماکے کی اطلاع ملتے ہی پولیس، ایمبولینس اور ایف سی اہلکار فوراً موقع پر پہنچے جب کہ ریسکیواہلکاروں نے ہلاک ہونے والے افراد اور زخمیوں کو اسپتال منتقل کرکے امدادی کارروائیوں کا آغاز کر دیا ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ دھماکے کی شدت اتنی زیادہ تھی کہ اس کی آواز دور دور تک سنی گئی۔ دھماکے کی وجہ سے لوگوں میں شدید خوف و ہراس پھیل گیا جب کہ ٹریفک کی روانی بھی شدید متاثر ہوئی ہے۔ پولیس اور ایف سی اہلکاروں نے علاقے کو گھیرے میں لے کر تحقیقات کا آغاز کردیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

کوئی غیر ملکی کمپنی بلوچستان میں ایک انچ بھی زمین نہیں خرید سکتی

کوئی غیر ملکی کمپنی بلوچستان میں ایک انچ بھی زمین نہیں خرید سکتی

کوئٹہ: ثنا بلوچ اور دیگر اراکین نے یہ معاملہ اٹھاتے ہوئے کہا کہ منتخب اراکین …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے