کراچی بدل گیا ہے اب بڑے جرائم نہیں ہوتے، گورنر سندھ

کراچی: گورنر سندھ محمد زبیر کا کہنا ہے کہ 2013 میں کراچی دنیا کا خطرناک ترین شہر تھا لیکن اب صورتحال تبدیل ہوچکی ہے۔ گورنر سندھ محمد زبیر گرین لائن بس پراجیکٹ کا معائنہ کرنے کے لیے کراچی کے علاقے حیدری پہنچے، جہاں انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ گرین لائن پراجیکٹ فائنل فیز میں ہے اپریل یا مئی میں یہ پراجیکٹ مکمل کرلیا جائے گا، جس کے باعث کراچی کے لوگوں کو کافی ریلیف ملے گا۔ گرین لائن سے پبلک ٹرانسپورٹیشن کا اچھا نظام شروع ہوگا، منصوبوں میں تاخیر ہوتی رہتی ہےلیکن غلط تاثر نہیں دینا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ کراچی سرکولر ریلوے (کے سی آر) کو لے کر جو بھی تحفظات ہیں وہ جلد پورے کیے جائیں گے کراچی پیکج کسی پارٹی کے لیے نہیں ہے بلکہ یہ کراچی کے عوام کے لیے ہے۔

اس موقع پر گورنر سندھ نے کراچی کی صورتحال پر بات کرتے ہوئے کہا کہ کراچی 4 سال پہلے جہاں تھا وہ اب بدل چکا ہے بڑے جرائم اب کراچی میں نہیں ہوتے۔ 2013 میں کراچی دنیا کا خطرناک ترین شہرتھا سرمایہ کار یہاں آنے کو تیار نہیں تھے لیکن اب صورتحال مختلف ہے، آج جب کراچی میں سرمایہ کار آتے ہیں تو ہوٹلوں میں جگہ نہیں ملتی، امن و امان کی بحالی میں رینجرز کا بہت اہم کردار ہے۔ گورنر سندھ نے کراچی کے مسائل پر بات کرتے ہوئے کہا شنھگائی پاور کے نیپرا سے متعلق جوبھی مسائل ہیں وہ جلد حل کیے جائیں گے، بجلی کے مسائل حل ہونے سے کراچی ایک الگ شہر بن کر ابھرے گا۔

یہ بھی پڑھیں

آج حکومت کے پاس بتانے کو کچھ بھی نہیں

کراچی: پاکستان پیپلزپارٹی کے سینئر رہنما مولا بخش چانڈیو نے کہا بلاول بھٹو اور شہباز …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے