مسکراہٹیں بکھیرنے والے معین اختر کو ہم سے بچھڑے 5 سال بیت گئے

عالمی شہرت یافتہ پاکستانی اداکار معین اختر کی پانچویں برسی آج منائی جارہی ہے۔

24 دسمبر 1950 کو کراچی میں پیدا ہونے والے معروف اداکار معین اختر فن کی دنیا کا ایسا ستارہ ہے جو شائقین کے دلوں میں آج بھی زندہ ہے ، انہوں نے 16 سال کی عمر میں فنی سفر کا آغاز اسٹیج ڈراموں سے شروع کیا۔ اسٹیج ڈراموں ’’بڈھا گھر پہ ہے‘‘ اور ’’بکرا قسطوں پر‘‘ نے معین اختر کو شہرت کی بلندیوں پر پہنچا دیا جب کہ’’روزی‘‘،’’ففٹی ففٹی‘‘،’’ہاف پلیٹ‘‘،’’شوٹائم‘‘،’’انتظار فرمایئے‘‘اور’’آنگن ٹیڑھا‘‘ ان کے یادگار ڈرامے ہیں۔

ٹی وی پر جہاں انہوں نے انور مقصود اور بشریٰ انصاری کے ساتھ مل کر کئی شاہکار پروگرام پیش کیے وہیں منچلے نوجوان سے لے کر ایک سنکی بوڑھے تک کے جو کردار انھوں نے ادا کیے انہیں دیکھ کر آج بھی ہونٹوں پر ہنسی مچل جاتی ہے جب کہ معین اختر کو ان کی ہمہ جہت فنکارانہ صلاحیتوں کی وجہ سے صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی سمیت کئی اہم قومی اور بین الاقوامی  ایوارڈز سے بھی نوازا گیا ہے۔

پاکستان کے لیے فخر کا باعث بننے والے معین اختر 2011  کو آج ہی کے روز کراچی میں دل کا دورہ پڑنے سے انتقال کرگئے لیکن ان کی یادیں آج بھی کروڑوں مداحوں کے دلوں میں زندہ ہیں

یہ بھی پڑھیں

شہنشاہِ غزل مہدی حسن کی 92 ویں سالگرہ آج منائی جارہی ہے

شہنشاہِ غزل مہدی حسن کی 92 ویں سالگرہ آج منائی جارہی ہے

شہنشاہِ غزل استاد مہدی حسن مرحوم کی 92ویں سالگرہ آج 18جولائی کو منائی جا رہی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے