ہائی کورٹ :وزیراعظم اور ان کے خاندان کے افراد کے خلاف نیب سے کارروائی کے لئے دائر درخواست پر جواب طلب

لاہور: لاہور ہائیکورٹ کے مسٹر جسٹس شاہدوحید نے ناجائز اثاثے بنانے کے الزام میں وزیر اعظم نواز شریف،بیگم کلثوم نواز،مریم نوازسمیت شریف فیملی کے 6 افراد کے خلاف نیب میں کارروائی کے لئے دائرایک اور درخواست پر نوٹس جاری کرتے ہوئے وفاقی حکومت سے 26اپریل تک جواب طلب کر لیاہے۔ درخواست گزار شہری منیر احمدکی جانب سے دائر درخواست میں عدالت کو بتایا کہ وزیر اعظم ان کی اہلیہ کلثوم نواز، بیٹوں حسن اور حسین نواز کے علاوہ ان کی بیٹی مریم نواز نے اپنے اثاثے چھپائے،غیر قانونی طور پر رقم بیرون ملک منتقل کی اور قوم سے غلط بیانی کی۔انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نے ذاتی حیثیت میں یہ اقدام کیا ،عدالت انہیں نااہل قرار دے۔انہوں نے عدالت سے استدعا کی کہ پانامہ لیکس کے معاملے کی انکوائری کے لئے کسی کمیشن کی کوئی حیثیت نہیں ،نیب کو تحقیقات کا پابند بنایا جائے تاکہ حقائق سامنے آ سکیں۔عدالت نے وفاقی حکومت کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیا،عدالت اسی نوعیت کی آدھی درجن کے قریب درخواستوں پر پہلے ہی نوٹس جاری کر چکی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

علیم خان, کے جوڈیشل, ریمانڈ میں 30 اپریل تک, توسیع

علیم خان کے جوڈیشل ریمانڈ میں 30 اپریل تک توسیع

لاہور: دوران سماعت نیب کے تفتیشی افسر کی جانب سے بتایا گیا کہ علیم خان …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے