حکومت عام معافی دے تو اہلکار رہا اور ہتھیار ڈال دوں گا، سرغنہ چھوٹو گینگ

راجن پور:  چھوٹو گینگ کے سرغنہ غلام رسول عرف چھوٹو نے کہا ہے کہ حکومت اسے عام معافی دے تو مغوی اہلکار رہا اور ہتھیار ڈال دوں گا۔

 چھوٹو نے کہا کہ اس کی پاک فوج سے کوئی لڑائی نہیں ہے۔ اغوا کیے گئے اہلکار میرے پاس ہیں آپریشن ہوا تو پہلے پولیس والے نشانہ بنیں گے۔ عام معافی نہ ملنے تک انھیں رہا نہیں کروں گا۔ ایک سوال کے جواب میں چھوٹو نے کہا کہ اس سے مذاکرات کے لیے کسی نے رابطہ نہیں کیا اور نہ ہی کسی سے مذاکرات ہو رہے ہیں۔

قبل ازیں چھوٹو گینگ کے سربراہ غلام رسول نے کہا تھا کہ اگر وزیر داخلہ چوہدری نثار انھیں فون کر کے آپریشن بند کرنے کی یقین دہانی کرائیں تو ہتھیار ڈالنے کے لئے تیار ہوں۔

یہ بھی پڑھیں

’نفرت انگیز‘ تقریر کرنے اور کارکنوں کو اشتعال دلانے کا الزام

’نفرت انگیز‘ تقریر کرنے اور کارکنوں کو اشتعال دلانے کا الزام

لاہور: کیپٹن (ر) صفدر کو اس وقت حراست میں لیا گیا جب وہ بذریعہ موٹروے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے