شاعر مشرق کا 140 واں یوم ولادت آج منایا جا رہا ہے

اسلام آباد: آج ملک بھر میں شاعر مشرق حکیم الامت ڈاکٹرعلامہ محمد اقبال رحمۃ اللہ علیہ کا 140 واں یوم ولادت نہایت عقیدت و احترام سے منایا جا رہا ہے۔ 9نومبر 1877ء کو سیالکوٹ میں پیدا ہونے والے ڈاکٹر سر علامہ محمد اقبال کا شمار برصغیر پاک و ہند کی تاریخ ساز شخصیات میں ہوتا ہے۔ اقبال پہلے وہ مفکر عظیم ہیں جنھوں نے سب سے پہلے یہ محسوس کر لیا تھا کہ برصغیر پاک و ہند میں اب مسلمان اور ہندو اکٹھے نہیں رہ سکتے۔ علامہ اقبال نے تمام عمر کے مسلمانوں میں بیداری و احساس ذمہ داری پیدا کرنے کی کوششیں جاری رکھیں مگر بدقسمتی سے وہ پاکستان کی صورت میں اپنے خواب کو حقیقت کے روپ میں ڈھلتا نہ دیکھ سکے اور 21 اپریل 1938ء کو خالق حقیقی سے جا ملے، انہیں لاہور میں سپرد خاک کیا گیا۔ ان کی خدمات کے اعتراف میں ناصرف پاکستان بلکہ دیگر کئی اسلامی ممالک میں ان کے نام سے شاہرات موسوم کی گئی ہیں۔ شاعر مشرق علامہ محمد اقبال کے یوم ولادت کے موقع پر ملک بھر میں خصوصی تقاریب کا اہتمام کیا جا رہا ہے۔ اس حوالے سے سب سے اہم تقریب مزار اقبال پر گارڈز کی تبدیلی تھی۔ پاک بحریہ کے کیڈٹس اور جوانوں نے پنجاب رینجرز کے جوانوں کی جگہ مزار اقبال پر اعزازی گارڈز کے فرائض سنبھال لیے۔ تقریب میں اسٹیشن کمانڈر لاہور کموڈور ساجد محمود نے پریڈ کا معائنہ کیا اور چیف آف نیول اسٹاف اور پاک بحریہ کے افسروں و جوانوں کی جانب سے علامہ اقبال کے مزار پر پھولوں کی چادر چڑھائی اور فاتحہ خوانی کی۔

یہ بھی پڑھیں

سرحدوں پر خطرات ہیں، غیر اعلانیہ جنگ شروع ہو چکی: شیخ رشید

سرحدوں پر خطرات ہیں، غیر اعلانیہ جنگ شروع ہو چکی: شیخ رشید

وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے شہباز شریف کو اپنا اچھا دوست قرار دیتے ہوئے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے