نیٹو کا افغانستان میں مزید 3 ہزار فوجی بھیجنے کا اعلان

برسلز: نیٹو نے  افغانستان میں مزید 3 ہزار فوجی  بھیجنے کا اعلان کیا ہے۔ غیرملکی خبررساں ایجنسی کے مطابق نیٹو کے جنرل سیکرٹری   جنرل جینس اسٹالٹنبرگ کی جانب سے یہ اعلان برسلز میں نیٹو کے وزرائے دفاع کے اہم اجلاس سے ایک روز قبل کیاگیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ افغانستان میں نیٹو کے مزید 3 ہزار فوجی بھیجے جارہے ہیں جس میں 1500امریکی جب کہ باقی 1500اتحادی ممالک کے اہلکار ہوں گے۔

جنرل جینس اسٹالٹنبرگ نے کہا کہ افغانستان جانے والا نیا فوجی دستہ جنگی آپریشنز یا دہشت گردوں کے خلاف کارروائیوں میں براہ راست حصہ نہیں لے گا بلکہ نئی کمک کا مشن افغان سیکورٹی فورسزکی تربیت اور دیگر امور میں معاونت  کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ نیٹو افواج افغانستان میں اپنی موجودگی کا احساس دلانا چاہتا ہے تاکہ دہشت گردوں کے خلاف جاری جنگ میں آنے والے جمود کو توڑ کرافغان فورسز کی  مزید مدد کی جائے جب کہ یہ طالبان کے لیے واضح پیغام ہے کہ وہ  کبھی یہ جنگ نہیں جیت سکتے۔

جنرل جینس کے مطابق اس وقت افغانستان میں نیٹو فوج کے 13000اہلکار موجود ہیں اور مزید 3000فوجیوں کی آمد سے یہ نفری 16000ہوجائے گی۔

یہ بھی پڑھیں

آل سعود کے جرائم پر دنیا میں صدائے اعتراض بلند

آل سعود کے جرائم پر دنیا میں صدائے اعتراض بلند

عالمی اداروں، تنظیموں اور سول سوسائٹی سے تعلق رکھنے والی نمایاں شخصیات نے سعودی عرب …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے