کے پی حکومت نے غیر حاضریوں پہ ڈاکٹروں کے 3 کروڑ روپے کاٹ لیے

پشاور: آزاد مانیٹرنگ یونٹ خیبر پختونخوا نے سال 2015ء سے 2017ء تک 1 ہزار 580 سرکاری ہسپتالوں اور طبی مراکز میں ہونے والی مانیٹرنگ کی رپورٹ جاری کردی ہے۔ مانیٹرنگ رپورٹ کے مطابق سال 2015ء سے 2017ء تک ڈیوٹی سے غفلت برتنے پر 12 ہزار 27 ملازمین کے خلاف کارروائی کی گئی ہے۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ غیر حاضر طبی عملے سے 3 کروڑ روپے کی کٹوتی کی گئی ہے، جبکہ 31 اہلکاروں کی تنخواہیں بند کر دی گئیں۔ اسی طرح 99 ڈاکٹروں کو شوکاز نوٹسز جاری کئے گئے، 23 ڈاکڑز اور اہلکار برطرف جبکہ 4 ہزار 61 ڈاکٹروں کو وارننگز جاری کئے گئے ہیں۔ آزاد مانیٹرنگ کی جانب سے جاری کردہ رپورٹ میں بنیادی صحت کے مراکز میں مریضوں کو درپیش مشکلات اور مسائل کی بھی نشاندہی کی گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

چترال میں بروغل کے مقام پر 5 برطانوی کوہ پیما حادثے کا شکار

چترال میں بروغل کے مقام پر 5 برطانوی کوہ پیما حادثے کا شکار

چترال: ضلعی انتظامیہ کے مطابق کوہ پیما چترال کے دورافتادہ علاقے بروغل میں کھویو نامی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے