نئی جنگ کی صورت میں امریکہ مشرق وسطیٰ سے بھی بھاگنے پہ مجبور ہوگا، ایران

قم: ایران کی سپاہ پاسداران انقلاب کے ڈپٹی کمانڈر بریگیڈیئر جنرل حسین سلامی نے کہا ہے کہ خطے میں نئی جنگ کی صورت میں امریکا مشرق وسطی سے بھاگنے پر مجبور ہو جائے گا۔ایرانی ذرائع ابلاغ کے مطابق جنوبی شہر قم میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ خطے میں نئی جنگ کی صورت میں امریکا کو مشرق وسطی سے بھاگنا پڑ جائے گا کیونکہ ایران تحریک مزاحمت کے ساتھ مل کر پوری قوت کے ساتھ میدان میں ڈٹ جائے گا۔انہوں نے کہا کہ ایران اور امریکا کی جنگ حق و باطل کی جنگ ہو گی اور عراق، شام اور یمن سمیت خطے کے تمام ملکوں کی صورت حال اس بات کی نشاندہی کر رہی ہے کہ مزاحمتی قوتوں کا محاذ طاقتور ہو رہا ہے اور سامراجی محاذ زوال کی جانب گامزن ہے۔ انہوں نے کہا کہ امریکا کو اچھی طرح معلوم ہے کہ اگر مزاحمتی محاذ کی متحرک جہادی مشین پوری قوت کے ساتھ سٹارٹ ہو گئی تو خطے کی صورت حال تبدیل ہو جائے گی اور اسرائیل کا نام و نشان تک باقی نہیں رہے گا۔

یہ بھی پڑھیں

ایران پر حملے کی امریکہ میں مخالفت

ایران پر حملے کی امریکہ میں مخالفت

سروے رپورٹ سے پتہ چلتا ہے کہ بیشتر امریکی عوام ایران کے خلاف فوجی حملے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے