پرانی مرم شماری پر انتخابات ہوئے تو آئینی بحران پیدا ہو جائیگا، احسن اقبال

اسلام آباد: وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال کا کہنا ہے کہ اگر پرانی مردم شماری پر 2018ء کے عام انتخابات ہوئے تو آئینی پیچیدگیاں پیدا ہوں گی۔ اسلام آباد میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے وفاقی وزیرداخلہ کا کہنا تھا کہ مردم شماری ہو چکی ہے اور خیبرپختونخوا و بلوچستان کی نشستیں بھی بڑھ چکی ہیں، آئندہ انتخابات نئے مردم شماری پر ہی کرانا ہوں گے لیکن اگر پرانی مردم شماری پر انتخابات ہوئے تو آئینی بحران پیدا ہو جائے گا۔ احسن اقبال کا کہنا تھا کہ پرانی مردم شماری پر الیکشن سے سیاسی تنازعات سر اٹھائیں گے، اس لیے سب جماعتوں کو چاہئے کہ مل کر بیٹھیں اور اتفاق رائے سے حلقہ بندیوں سے متعلق آئینی بل کو منظور کرائیں تاکہ 2018 کے عام انتخابات مقررہ وقت پر ہوسکیں، جمہوری تسلسل کے لئے تمام سیاسی جماعتوں کو ذمہ داری کا مظاہرہ کرنا ہوگا۔

یہ بھی پڑھیں

سائبر کرائم میں شہریوں کی شکایتوں پر سست روی سے کام کرنا کیوں مشکل ہورہا ہے

سائبر کرائم میں شہریوں کی شکایتوں پر سست روی سے کام کرنا کیوں مشکل ہورہا ہے

اسلام آباد: سینٹرز کے امور ڈپٹی ڈائریکٹر چلارتے ہیں، سی سی آر سیز ایک زون …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے