اسموگ ایک آسمانی آفت ہے

لاہور: پنجاب بھر میں اسموگ کے باعث مختلف ٹریفک حادثات اور بیماریوں کے پھیلنے کے بعد علمائے کرام نے اسموگ کو آسمانی آفت قرار دے دیا۔ علمائے کرام نے اسموگ کو آسمانی آفت قرار دیتے ہوئے عوام کو توبہ استغفار اور نماز استسقا ادا کرنے کا مشورہ دے دیا ہے۔ علمائے کرام کا کہنا ہے کہ اسموگ ایک آسمانی آفت ہے اور اس سے بچنے کا واحد حل اپنے رب کے حضور توبہ ہے جس کے لئے سارے مسلمانوں کو مصلے پر آنا پڑے گا۔ علماء کرام کا کہنا ہے کہ اگرچہ آئندہ کئی روزتک بارش کا کوئی امکان نہیں لیکن نماز استسقا اور توبہ سے بڑی بڑی مصیبتیں ٹل جاتی ہیں اور اس عمل کی بدولت اللہ کی رحمت سے بارش بھی ہو سکتی ہے اور قوم کو درپیش مسائل سے بھی چھٹکارا مل سکتا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ جس ملک میں اسلامی نظام کا مذاق اڑایا جائے وہاں اس طرح کی آفات کا وارد ہونا کوئی بڑی بات نہیں، قوم کواپنے اعمال درست کرکے سچی توبہ کرنی چاہئے۔ واضح رہے کہ لاہور سمیت پنجاب بھر میں چھائی اسموگ سے شہری شدید متاثر ہو رہے ہیں، ایک طرف اسپتالوں میں آنکھوں اور سانس کے مریضوں کی تعداد بڑھتی جا رہی ہے تو دوسری طرف حد نگاہ کم ہونے سے حادثات بھی بڑھ گئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

ہم کاروبار, اور پیسہ وائٹ ہونے, کے لالچ میں, کام کرتے رہے

ہم کاروبار اور پیسہ وائٹ ہونے کے لالچ میں کام کرتے رہے

لاہور: شہباز شریف فیملے کے خلاف بننے والے وعدہ معاف گواہ مشتاق چینی اور اس …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے